پاکستان کی خبریں

کلبھوشن کیس ٗ پاکستان نے سابق چیف جسٹس تصدق حسین جیلانی کو ایڈہاک جج مقرر کردیا

klbhooshn

عالمی عدالت جسٹس ریٹائرڈ تصدق حسین جیلانی کے بطور ایڈہاک جج تقرری سے متعلق بھارت کو آگاہ کرے گی
اسلام آباد(این این آئی)عالمی عدالت انصاف میں بھارتی جاسوس کلبھوشن یادیو کی سزائے موت سے متعلق کیس میں پاکستان نے سابق چیف جسٹس تصدق حسین جیلانی کو ایڈہاک جج مقرر کردیا۔دفتر خارجہ کے ترجمان کی جانب سے جاری بیان کے مطابق عالمی عدالت انصاف کیس کے فریقین کو ایڈہاک جج مقرر کرنے کا حق دیتا ہے۔اس سے پہلے پاکستان کی جانب سے اس کیس میں کوئی ایڈہاک جج نہیں تھا۔ترجمان نے کہا کہ بھارت کی جانب سے جسٹس بھنڈاری عالمی عدالت انصاف میں ایڈہاک جج کے طور پر مقرر ہیں۔عالمی عدالت انصاف میں فریقین کی جانب سے مقرر کیے جانے والے ایڈہاک ججز کو وہی اختیارات حاصل ہوتے ہیں، جو عدالت کے دیگر ججز کے پاس ہوتے ہیں۔عالمی عدالت جسٹس ریٹائرڈ تصدق حسین جیلانی کے بطور ایڈہاک جج تقرری سے متعلق بھارت کو آگاہ کرے گی۔واضح رہے کہ جسٹس ریٹائرڈ تصدق حسین جیلانی نے 31 جولائی 2004 سے 11 دسمبر 2013 تک سپریم کورٹ کے جج کے طور پر فرائض انجام دیئے اس کے بعد وہ 5 جولائی 2014 تک چیف جسٹس آف پاکستان کے عہدے پر بھی فائز رہے۔