عدالت عمران خان اور جہانگیر ترین کی قسمت کا فیصلہ آج سنائے گی۔

loading...

تحریک انصاف کے چیئر مین عمران خان اور جنرل سیکریڑی جہانگیر ترین کی نااہلی کا فیصلہ سپریم کورٹ آج دو بجے سنائے گی۔ یاد رہے کہ عمران خان اور جہانگیر پر چلنے والے اس مقدمہ حنیف عباسی کی درخواست پر شروع کیا گیا تھا جس کا فیصلہ 14 نومبر کو چیف جسٹس میاں ثاقب نثار کی سربراہی میں بننے والے بنچ نے کاروائی کے بعد محفوظ کر لیا تھا۔

اپنی اس درخواست میں حنیف عباسی نے عمران خان اور جہانگیر ترین پر جائیداد کی شفاف منی ٹریل نہ ہونے اور آف شور کمپنیاں ڈکلیر نہ کرنے کا الزام عائد کیا تھا۔ اس مقدمے کی ایک طویل عرصے سے سماعت جاری تھی جس کے دوران  50 سماعتوں کے دوران 7 ہزار دستاویزات کا عدالت نے جائزہ لیا اور دونوں طرف سے دلائل کی روشنی میں فیصلہ محفوظ کیا۔

اس مقدمے میں عمران کی طرف سے ان کے وکیل نعیم بخاری تھے اور جہانگیر کی طرف سے سکندر مہمند کیس کی پیروی کر رہے تھے اور درخواست گزار حنیف عباسی جانب سے اکرم شیخ عدالت میں پیش ہوتے رہے ہیں۔

تاہم آخری سماعت میں چیف جسٹس نے ریمارکس دیے تھے کہ عمران خان نے آف شور کمپنی کبھی ڈیکلیر نہیں کہ تاہم لندن کا فلیٹ ڈکلیر کیا تھا۔

Comments

comments

مزید پڑھیں۔  ہم پاکستان کو یہ چیز فروخت کرنا چاہتے ہیں، امریکہ نے حیرت انگیز پیشکش کردی

اپنا تبصرہ بھیجیں