ہسپتال کے باہر فرش پر بچے کی پیدائش

رائیونڈ کے ڈسٹرکٹ ہیڈ کوارٹرز ہسپتال میں ڈاکٹر کی عدم موجودگی اور عملے کی جانب سے علاج معالجے سے انکار کے باعث ایک خاتون نے ہسپتال کے باہر فرش پر بچے کو جنم دیا۔ہسپتال کی جانب سے کی گئی ابتدائی انکوائری کے مطابق رائیونڈ کے نواحی گاؤں سے ایک خاتون سمیرہ بی بی کو زچگی کیلئے صبح سوا 6 بجے کے قریب ڈسٹرکٹ ہیڈ کوارٹرز ہسپتال لایا گیا، تاہم ڈاکٹر موجود نہ ہونے پر عملے نے علاج معالجے سے انکار کردیا جس کے بعد خاتون نے ساڑھے 6 بجے انتہائی تکلیف کی حالت میں ہسپتال کے باہر فرش پر بچے کو جنم دیا۔موقع پر موجود لوگوں نے بتایا کہ ریسکیو 1122 کی کوئی ایمبولینس اْس وقت وہاں موجود نہیں تھی لیکن جب تک ایمبولینس کو بلوایا گیا اس وقت تک بچے کی ولادت ہوچکی تھی۔جب اس حوالے سے پنجاب کے وزیر صحت خواجہ عمران نذیر سے رابطہ کیا گیا تو انہوں نے بتایا کہ صوبائی وزارت نے واقعہ کی تحقیقات کا حکم دے دیا ہے۔انہوں نے کہا کہ واقعے میں ملوث کسی بھی ڈاکٹر یا اسٹاف ممبر کے خلاف کارروائی کی جائے گی اور اس معاملے کی تحقیقات کیلئے کمیٹی قائم کی جاچکی ہے۔دوسری جانب سیکریٹری ہیلتھ علی جان خان نے بتایا کہ ڈسٹرکٹ ہیڈکوارٹرز ہسپتال رائیونڈ میں گائنی سے متعلق تمام سہولیات دستیاب ہیں انہوں نے بتایا کہ حالیہ واقعے کی تحقیقات کے لیے ایک کمیٹی تشکیل دی جاچکی ہے۔ہسپتال ذرائع کے مطابق صوبائی حکومت کی جانب سے تشکیل دی گئی انکوائری کمیٹی ڈسٹرکٹ ہیڈکوارٹرز ہسپتال پہنچ چکی ہے اور تحقیقات شروع کر دیں ٗدوسری جانب ہسپتال کے میڈیکل سپرنٹنڈنٹ ڈاکٹر عامر نے بتایا کہ ماں اور بچہ دونوں بالکل ٹھیک ہیں ٗ معاملے کی انکوائری کی جارہی ہے۔

Spread the love

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں