بھارت میں مسلمانوں کے ساتھ بدترین سلوک کیا جا رہا ہے ،عالمی ضمیر سو رہا ہے ‘ملائیکہ نور

مسلمانوں

لاہور :اداکارہ و ماڈل ملائیکہ نور نے کہا ہے کہ بھارت میں اقلیتوں کے ساتھ بدترین سلوک کیا جا رہا ہے اور خاص طور پر مسلمانوں کو ظلم و ستم کا سب سے زیادہ نشانہ بنایا جا رہا ہے ۔

انہوں نے لندن سے خصوصی گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ بابری مسجد کی شہادت امن پسند ملکوں کی آنکھیں کھول دینے کے لئے کافی تھا کہ وہ بھارت کا مکروہ چہرہ دیکھ سکتے مگر افسوس کہ اس نازک مسئلے پر اقوام متحدہ سمیت کسی جانب سے بھی مذمت نہیں کی گئی اور بابری مسجد کی جگہ کے حصول کے لئے مسلمانوں اور ہندوؤں کے درمیان دو دہائیوں تک عدالتی جنگ جاری رہی اور یہاں پر بھی بھارتی عدالت کی جانبداری سامنے آگئی اور مسلمانوں کو ان کے حقوق سے محروم کر دیا گیا ۔

انہوں نے کہا کہ پوری دنیا میں اقلیتوں کے تحفظ کو مقدم سمجھا جاتا ہے اور انہیں انکے بھرپور حقوق دیئے جاتے ہیں مگر ہندو ذہنیت نے تقسیم پاکستان کے بعد کبھی بھی مسلمانوں کی علیحدہ شناخت کو تسلیم نہیں کیا اور بھارت میں موجود مسلمانوں اور مقبوضہ کشمیر میں نہتے مسلمانوں پر جس طرح کی دہشت گردی کارروائیاں کی جا رہی ہیں اس پر عالمی ضمیر کے سونے کا پتہ چلتا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ اگر بابری مسجد اور کشمیر کے حوالے سے اقوام متحدہ نے اپنا کردار ادا نہ کیا تو بہتر ہے اس فورم کو بند کر دیا جائے ۔

Spread the love

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں