پاکستان مسلم لیگ ن کا قومی اسمبلی کی تمام کمیٹیوں سے دستبردار ہونے کا فیصلہ

مسلم لیگ ن

لاہور: پاکستان مسلم لیگ (ن) نے قومی اسمبلی کی پبلک اکاؤنٹس کمیٹی کی چیئرمین شب قائد حزب اختلاف شہباز شریف کو نہ ملنے پر تمام کمیٹیوں سے ارکان دستبردار کرانے کا فیصلہ کرلیا۔

گزشتہ روز وفاقی وزیر اطلاعات فواد چوہدری کا میڈیا سے گفتگو میں کہنا تھا کہ چیئرمین پی اے سی کے لیے اپوزیشن کا حق نہیں بنتا، وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی وطن واپس آئیں گے تو پارٹی اس حوالے سے فیصلہ کرے گی۔
انہوں نے کہا کہ نواز شریف کے منصوبوں پر آڈٹ کے لیے شہباز شریف کو کیسے بٹھا دیں، یہ تو ایسے ہی ہے جیسے دودھ کی رکھوالی پر بلا۔
وفاقی وزیر کے بیانات کے بعد حکومت اور اپوزیشن جماعت مسلم لیگ (ن) کے درمیان قومی اسمبلی کی پبلک اکاؤنٹس کمیٹی کی چیئرمین شپ کے معاملے پر تنازع شدت اختیار کر گیا ہے۔
مسلم لیگ (ن) نے پبلک اکاؤنٹس کمیٹی کی چیئرمین شپ سے متعلق بڑا فیصلہ کرلیا ہے۔
ذرائع مسلم لیگ ن کا کہنا ہے کہ پبلک اکاؤنٹس کمیٹی کی چیئرمین شپ نہ ملی تو تمام کمیٹیوں سے اپنے ارکان دستبردار کرا لیں گے۔
ذرائع کے مطابق قائمہ کمیٹیوں سمیت کسی بھی کمیٹی کا مسلم لیگ (ن) کے ارکان حصہ نہیں بنیں گے۔
یاد رہے کہ پاکستان پیپلزپارٹی اور مسلم لیگ (ن) کے دور حکومت میں پبلک اکاؤنٹس کمیٹی کی چیئرمین شپ قائد حزب اختلاف کے پاس ہی رہی ہے تاہم تحریک انصاف کی حکومت کو اپوزیشن کی جانب سے نامزدگی پر اعتراض ہے۔

Spread the love
  • 3
    Shares

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں