تمام الزامات کا سپریم کورٹ میں جواب دوں گی، علیمہ خان

وزیراعظم

وزیراعظم عمران خان کی ہمشیرہ علیمہ خان کا کہنا ہے کہ وہ اپنے اوپر لگائے گئے تمام الزامات کا جواب سپریم کورٹ میں دیں گی۔

ٹوکیو میں ایک تقریب کے دوران میڈیا سے گفتگو میں علیمہ خان نے کہا کہ ‘ان سے سخت سوالات اس لیے کیے جا رہے ہیں کیونکہ وہ بریکنگ نیوز میں ہیں’۔

تاہم ان کا کہنا تھا کہ ‘وہ اللہ کو جواب دہ ہیں اور عدالت جب بلائے گی تو اسے بھی جواب دیں گی’۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ وہ عوامی نمائندہ (پبلک ہولڈر) نہیں بلکہ ایک عام شہری (پرائیویٹ سٹیزن) ہیں اور جہاں جواب دینا ہوگا، وہاں دیں گی’۔

وزیراعظم کی ہمشیرہ کا کہنا تھا کہ ‘ان سے پوچھا جا رہا ہے کہ پیسے کدھر سے آئے؟ یہ پیسہ انہیں نانا، دادا اور والدین سے وراثت میں ملا ہے اور انہوں نے خود بھی کمایا ہے’۔

علیمہ خان نے کہا کہ ‘ہم میں آج تک کسی بورڈ ممبر نے پیسوں کو ہاتھ تک نہیں لگایا اور نہ زندگی میں کبھی غلط طریقے سے پیسہ کمانے کی کوشش کی’۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ ‘ان الزامات سے تکلیف کا احساس ہوتا ہے، حتیٰ کہ ان کے والد پر بھی کرپشن کے الزامات لگائے گئے جو باعث تکلیف ہیں’۔

علیمہ خان کا کہنا تھا کہ ‘ان کے والد نے ہمیشہ ایمانداری کا درس دیا اور رشوت لینا تو دور کی بات کبھی دی بھی نہیں، سوائے ایک ٹیلی فون والے کے، جسے وہ سو روپے دیتے تھے’۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ ‘عمران خان نے ہمیشہ پیسہ جمع کرنے کی مخالفت کی ہے’۔

واضح رہے کہ گزشتہ روز سپریم کورٹ نے فیڈرل بورڈ آف ریونیو (ایف بی آر) کو وزیراعظم عمران خان کی ہمشیرہ علیمہ خان کی جائیداد اور ایمنسٹی لینے کی تفصیلات پیش کرنے کا حکم دیا تھا۔

Spread the love

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں