سپریم کورٹ کا پنجاب حکومت سے واٹرٹریٹمنٹ پلانٹس لگانے پرحتمی پلان طلب

واٹرٹریٹمنٹ پلانٹس
loading...

لاہور: واٹر ٹریٹمنٹ پلانٹس نہ لگانے سے متعلق سپریم کورٹ رجسٹری میں سماعت کے دوران چیف جسٹس نے ریمارکس دیے کہ دریائے راوی میں گندگی پھینکی جا رہی ہے۔

تفصیلات کے مطابق سپریم کورٹ لاہور رجسٹری میں چیف جسٹس ثاقب نثار کی سربراہی میں واٹر ٹریٹمنٹ پلانٹس نہ لگانے سے متعلق کیس کی سماعت ہوئی۔

عدالت میں سماعت کے دوران چیف جسٹس نے ریمارکس دیے کہ 5 دسمبر کو حتمی پلان پیش کریں ، ضروت پڑی تو وزیراعلیٰ کو بلائیں گے۔

میاں محمود الرشید نے کہا کہ واٹر ٹریٹمنٹ پلاٹنس لگانے کے لیے کمیٹی تشکیل دی جاچکی ہے، منگل کو دوبارہ میٹنگ بلائی ہے۔

چیف جسٹس ثاقب نثار نے ریمارکس دیے کہ پورے لاہور کو گندا پانی پلا رہے ہیں، دریائے راوی میں گندگی پھینکی جا رہی ہے۔

میاں محمود الرشید نے کہا کہ عدالتی احکامات پر عمل کے لیے دن رات کام کر رہے ہیں، چیف جسٹس نے کہا کہ بدھ کے روز حتمی پلان لے کر اسلام آباد آئیں وہی سماعت ہوں گی۔

سپریم کورٹ نے پنجاب حکومت سے واٹر ٹریٹمنٹ پلانٹس لگانے پر حتمی پلان طلب کرتے ہوئے سماعت 5 دسمبر تک ملتوی کردی۔

Spread the love

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں