عمران خان۔ پاکستانیوں کیلئےاندھیرے میں امید کی کرن۔

Imran_Khan_aajkal_google
loading...

تجزیہ: عبدالعلیم نجم

عمران خان 25نومبر 1952 کو پیدا ہوئے۔ لاہور کےایچیسن سکول سے تعلیم حاصل کرنے کے بعد کرکٹ کو کرئیر کے طور پر اپنایا۔
عمران خان نے برطانیہ کی قدیم ترین اور دنیا کی بہترین تعلیم گاہوں میں سے ایک آکسفورڈ یونیورسٹی سے اعلٰی تعلیم حاصل کی۔
دنیائے کرکٹ میں عمران خان نے پہلے برطانیہ میں اپنا لوہا منوایا اور پھر تیز گیند باز کی حیثیت سے پاکستانی کرکٹ ٹیم کا حصّہ بنے۔ اپنی آل راؤنڈر پرفارمینس اور قائدانہ صلاحیتوں کی بدولت عمران خان کو پاکستانی کرکٹ ٹیم کا کپتان بنادیاگیا۔ جس کی وجہ سے پاکستان کرکٹ کی تاریخ میں پہلی بار 1992 میں ورلڈ چیمپئن بنا۔
کرکٹ کو خیرباد کہنے کے بعد عمران خان نے پاکستان کا پہلا کینسر ہسپتال شوکت خانم ٹرسٹ ہسپتال بنانے کی ٹھانی اور اپنی زندگی لوگوں کی خدمت اور پاکستان کے روشن مستقبل کیلئے وقف کردی۔

PTI-Jalsa-at-D-chock-Islamabad-11-May-2014

پاکستان کی تاریخ میں ایسے لیڈر جنہوں نے نوجوانوں کو سیاسی شعور بخشا اور نوجوانوں کو سیاست میں متحرک کیا۔ ذولفقار علی بھٹو کے بعد عمران خان نمایاں ہیں۔

یہی وجہ ہے کہ 1970 کے انتخابات کے بعد جسمیں ووٹر ٹرن آؤٹ 64% فیصد تھا۔ اس کے بعد سب سے زیادہ ووٹر ٹرن آؤٹ 2013 کے انتخابات میں دیکھا گیا۔ جب ووٹر ٹرن آؤٹ 43 سالوں بعد سب سے زیادہ 53% دیکھا گیا۔

عمران خان 2002 میں پہلی بار اپنی آبائی علاقے میانوالی سے رکن قومی اسمبلی منتخب ہوئے۔ 2008 میں اصولی موئقف اپناتے ہوئے عمران خان نے 2008 کے عام انتخابات کا بائیکاٹ کیا اور اپنی سیاسی جماعت پاکستان تحریک انصاف کی تنظیم سازی کی۔
2013 کے عام انتخابات میں عمران خان نے پورے ملک میں اپنے امیدوار کھڑے کئے اور خیبر پختونخوا میں صوبائی حکومت بنانے میں کامیاب ہوئے۔ جوکہ آج پانچ سالوں بعد دیگر صوبوں کیلئے ایک مثالی صوبہ ہے۔

مزید پڑھیں۔  آشیانہ ہاؤسنگ کیس: نیب نے فواد حسن فواد کو گرفتار کرلیا، ذرائع

عمران خان جب کرکٹ میں تھے تو تب بھی نوجوانوں کے مشعل راہ تھے اور جب سیاست میں آئے تو تب بھی نوجوانوں کو اپنا گرویدہ بنایا۔
آج سیاست میں عمران خان جس مقام پرہیں۔ اسکے پیچھے 20 سالہ جدوجہد کا ایک طویل کٹھن سفر ہے۔ عمران خان آج روائتی سیاست سے ہٹ کر خود کو نوجوانوں کا نمائندہ کہتےہیں اور نوجوانوں کو پاکستان کا محافظ سمجھتے ہیں۔

ImranKhan_Struggle_aajkal_google

یہ عمران خان کی شخصیت ہی ہے کہ نوجوان بشمول خواتین اور بچے عمران خان کی محبت میں جلسوں میں جوق در جوق کھینچے چلے آتے ہیں۔
عمران خان کی سیاست نے عوام کو سیاسی طور پر متحرک کیا۔ نوجوانوں کو سیاسی شعور دیا اور نوجوانوں کو یہ احساس دلوایا کہ وہ آگے بھڑ کر اس قوم کی بہتری کے لیے عملی سیاست میں شریک ہوں۔

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں