بابری مسجد پر حملہ اور بلبیر سنگھ ۔

بابری مسجد پر حملہ اور بلبیر سنگھ ۔
loading...
آج سے 25 سال قبل بھارتی شہر گجرات میں [highlight bgcolor=”#ffffff” txtcolor=”#dd3333″]بابری مسجد[/highlight] کو شہید کرنے کا ایک انتہائی دردناک واقع پیش آیا تھا۔ جس نے دنیا بھر کے مسلمانوں کے سینے چھلنی کر دئیے تھے۔ اِن ظالم انتہا پسندوں میں ” بلبیر سنگھ ” نامی ایک نوجوان بھی شامل تھا۔ جوکہ ان انتہا پسند جنونیوں کی قیادت کررہا تھا۔ آپ یہ جان کر حیران ہوں گے کہ یہ شخص، جو مسلمانوں سے شدید نفرت رکھتا تھا۔ بابری مسجد پر حملے کے چند ماہ بعد ہی اپنے گمراہی پر مبنی نظریات سے تائب ہوگیا اور اسی دین کو قبول کرنے کا فیصلہ کرلیا کہ جس کی دشمنی اس کا اوڑھنا بچھوڑنا تھی۔

اب بلبیر سنگھ ماضی کا قصہ ہوگیا۔ اس کا نام محمد عامر ہے۔ جو ناصرف اسلام کا پرجوش علمبردار ہے۔ بلکہ اس کی زندگی کا سب سے بڑا خواب یہ ہے کہ وہ 100 مساجد تعمیر کرے۔

محمد عامر نے بھارتی نجی خبر رساں ادارے سے بات کرتے ہوئے ہندو انتہا پسند تنظیم آر ایس ایس کے ساتھ اپنی وابستگی کے بارے میں بتایا۔

محمد عامر نے کہا کہ میں ذات کا راجپوت ہوں اور تقسیم ہند کے وقت میرے باپ نے مسلمانوں کو حفاظت کے لیے ہر ممکن مدد کی تھی۔ میرا باپ چاہتا تھا کہ میں اور میرے تین بھائ بھی ایسا ہی کریں۔

محمد عامر نے بتایا کہ جب وہ پانی پت منتقل ہوئے تو وہاں انہیں مزہبی امتیاز کا نشانہ بنایا گیا۔ کوئی بچہ ان کے ساتھ کھیلنے کو تیار نہیں ہوتا تھا۔ یہ وہ وقت تھا جب میں آر ایس ایس میں شامل ہوا۔ یہی وہ جگہ ہے جہاں مجھے امتیاز کا نشانہ نہیں بنایا گیا ۔ محمد عامر نے آر ایس ایس میں اپنے پہلے دن کو یاد کرتے ہوئے بتایا کہ مجھے پہلے دن ” آپ” کہا گیا ۔ اس دن میں بہت خوش تھا اور یہی دن میرا آر ایس ایس کے ساتھ وابستگی کی وجہ بنا۔ اور پھر بابری مسجد تک کا سفر طے ہوا۔

بابری مسجد واقعہ کے بعد محمد عامر کو اسکے باپ نے اسے گھر سے نکال دیا ۔ باپ کی موت پہ محمد عامر گھر آیا تو اسے پتہ چلا کہ اس کا دوست “یو گندر پال” جو بابری مسجد واقع میں اس کے ساتھ تھا۔ وہ مسلمان ہوگیا ہے۔ محمد عامر، یوگندر سے ملنے گیا تو اس نے بتایا کہ بابری مسجد واقعہ نے یوگندر کو پاگل کر دیا تھا اور یوگندر کے مطابق مسلمان ہونے اسے کافی سکون میسر آیا ہے۔ یوگندر سے ملنے کے بعد محمد عامر کو لگا کہ شاید وہ بھی پاگل ہوجائے یا پاگل ہوچکا ہے۔ یہی وہ احساس گناہ تھا۔ جس نے محمد عامر کو مسلمان ہونے کی طرف مائل کیا۔ اب بلیبر سنگھ، محمد عامر ہے جو امن اور رواداری کی بات کرتا ہے اور اسکا مشن ہے کہ وہ 100 مساجد تعمیر کرے گا۔

بابری مسجد

Spread the love
  • 1
    Share

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں