بھارتی جاسوس کلبھوشن جادھو کا کیس عالمی عدالت انصاف میں سماعت کے لیے مقرر

کلبھوشن جادھو

بلوچستان سے گرفتار بھارتی جاسوس کلبھوشن جادھو کا کیس عالمی عدالت انصاف میں سماعت کے لیے مقرر ہوگیا۔

عالمی عدالت انصاف کی جانب سے جاری اعلامیے کے مطابق کلبھوشن جادھو کا کیس فروری 2019ء میں سماعت کے لیے مقرر کیا گیا ہے۔

اعلامیے کے مطابق عالمی عدالت انصاف میں کلبھوشن جادھو کیس کی سماعت 18 سے 21 فروری تک ہوگی۔

عالمی عدالت انصاف کی جانب سے جاری بیان کے مطابق بھارت 18 فروری 2019ء کو دن 10 سے ایک بجے تک دلائل دے گا جب کہ 19 فروری کو دن 10 سے ایک بجے تک پاکستان دلائل دے گا۔

اعلامیے کے مطابق 20 فروری کو 3 سے ساڑے 4 بجے تک بھارت دلائل دے گا جب کہ 21 فروری کو ساڑے 4 سے 6 بجے تک پاکستان اپنے دلائل دے گا۔

واضح رہے کہ کلبھوشن جادھو کو 3 مارچ 2016ء کو بلوچستان کے علاقے سے گرفتار کیا گیا تھا۔ اس پر پاکستان میں دہشت گردی اور جاسوسی کے سنگین الزامات ہیں اور بھارتی جاسوس نے تمام الزامات کا مجسٹریٹ کے سامنے اعتراف بھی کیا ہے۔

رواں برس 10 اپریل 2017 کو کلبھوشن جادھو کو جاسوسی، کراچی اور بلوچستان میں تخریبی کارروائیوں میں ملوث ہونے پر سزائے موت سنائی گی تھی۔

لیکن بھارت کی جانب سے عالمی عدالت میں معاملہ لے جانے کے سبب کلبھوشن جادھو کی سزا پر عمل درآمد روک دیا گیا۔

Spread the love
  • 3
    Shares

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں