لاہور میں موٹرسائیکل پر سفر کرنے والی خواتین پر بھی بڑی پابندی لگ گئی

موٹرسائیکل

لاہور: شہر میں آج سے موٹر سائیکل سواردونوں افراد کیلئے ہیلمٹ لازمی ہو گا جبکہ خواتین کوبھی استثنیٰ نہیں ہوگا،مال روڈ پر ہیوی بائیک لیڈی وارڈنز بھی تعینات کر دی گئی ہیں۔

چیف ٹریفک آفیسر لاہور کیپٹن(ر)لیاقت علی ملک نے کہا ہے کہ موٹرسائیکل سوار فرنٹ اور سیکنڈ سیٹر کےلئے ہیلمٹ لازمی ہے، موٹر وہیکل آرڈیننس 1965 کے تحت کوئی بھی فرد بغیر ہیلمٹ نہ موٹرسائیکل چلا سکتا ہے اور نہ ہی بغیر ہیلمٹ پیچھے بیٹھ سکتا ہے۔

عدالتی احکامات کی من و عن پاسداری کو یقینی بنانے کےلئے آج سے پیچھے بیٹھنے والے کےخلاف بھی سخت کریک ڈاؤن کیا جائیگا اور کوئی خاتون بغیر ہیلمٹ اس پابندی سے مستثنیٰ نہیں ہوگی، موٹرسائیکل چلانی یا پیچھے بیٹھنا ہے تو ہیلمٹ پہننا لازمی ہے۔

کریک ڈائون کےلئے مال روڈ پر ہیوی بائیک لیڈی وارڈنز بھی تعینات کر دی گئی ہیں، جو بغیر ہیلمٹ پیچھے بیٹھی خواتین کو چالان ٹکٹ جاری کریں گی، چالان ٹکٹ فرنٹ رائیڈر کو ہی جاری کیا جائیگا۔ لین لائن،سٹاپ لائن اور سائیڈ ویو مررز نہ لگانے والوں کو بھی چالان ٹکٹ جاری ہو ں گے۔

Spread the love

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں