گورنر ہاؤس پنجاب کی دیواروں کی جگہ جنگلے نصب کرنے کا اقدام عدالت میں چیلنج

گورنر ہاؤس پنجاب

لاہور: گورنرہاؤس لاہورکی دیواروں کی جگہ جنگلے نصب کرنے کا اقدام لاہورہائی کورٹ میں چیلنج کیے جانے کے بعد دیواریں گرانے کا کام روک دیا گیا ہے، وزیراعظم نے دیواریں گرانے کی ہدایت کی تھی۔

تفصیلات کے مطابق لاہور ہائی کورٹ میں کئی کینال ایکڑ پر محیط گورنرہاؤس کی دیواریں گرانے کا حکومتی اقدام چیلنج کردیا گیا، درخواست گزار نے مؤقف اختیار کیا کہ تاریخی عمارت کی دیواریں گراناغیرقانونی ہے۔

عدالت میں درخواست دائرہونے کےبعد انتظامیہ نے جنگلے اتارنے کاکام روک دیا گیا ہے۔

loading...

یاد رہے کہ وزیراعظم عمران خان گورنرہاؤس پنجاب کی تاریخی عمارت کی دیواریں گرانے کا حکم دیا تھا ، جس پرانتظامیہ نے فوری ایکشن لیتے ہوئے اور دیواروں پر لگے جنگلے ہٹانے کا کام شروع کردیا تھا۔فاقی وزیر برائے تعلیم شفقت محمود کا کہنا تھا کہ گورنرہاؤس کی کسی بھی عمارت کوگرایا نہیں جا رہا، گورنرہاؤس کی چاردیواری کی جگہ خوبصورت جنگلے کی تنصیب ہوگی۔

شفقت محمود نے کہا تھا کہ گورنرہاؤس میں آرٹ گیلری اورمیوزیم قائم کیا جا رہا ہے، نتھیا گلی گورنرہاؤس کو ہوٹل میں تبدیل کیا جا رہا ہے، کراچی اور پشاور کے گورنر ہاؤسز میں تبدیلیاں لارہے ہیں۔

واضح رہے کہ عمران خان نے انتخابی مہم میں‌ گورنر ہاؤسز سمیت حکومتی عمارتوں سے متعلق کئی وعدے کیے تھے، وزیر اعظم کا حلف اٹھانے کے بعد عمران خان کے احکامات پر گورنر ہاؤس پنجاب کو عوام کے لیے کھول دیا گیا تھا۔

Spread the love

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں