افغانستان کی سرزمین کو پاکستان کیخلاف استعمال کیا جارہاہے ،میر عبدالقدوس بزنجو

عبدالقدوس بزنجو

چاہے کوئی شخص کتناہی بااثر کیوں نہ ہو اگر قانون کو اپنے ہاتھ میں لینے کی کوشش کی تو کارروائی کی جائیگی، وزیراعلی بلوچستان

کوئٹہ : وزیراعلی بلوچستان میر عبدالقدوس بزنجو ،صوبائی وزیر داخلہ میر سرفراز بگٹی نے کہاہے کہ قمبرانی روڈ پر دو قبائل کے درمیان گزشتہ روز فائرنگ کا ہونیوالا واقعہ افسوسناک ہے ،بلوچستان ایک قبائلی صوبہ ہے ،ابھی تک میرے علم میں نہیں کہ کسی ایم این اے کیخلاف کوئی ایف آئی آر درج ہوئی ہے ، چاہئے کوئی شخص کتناہی بااثر کیونکہ ہو ،قانون کو اپنے ہاتھ میں لینے کی کوشش کی تو کارروائی کی جائے گی۔

تمام پہلوؤں پر غور کیا جارہا ہے ،تحقیقات کے بعد جلد ہی تمام وجوہات سامنے آ جائینگی ۔یہ بات عبدالقدوس بزنجو نے منگل کی شام کو وزیراعلی سیکرٹریٹ میں مشترکہ پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہی ۔

عبدالقدوس بزنجو نے کہاکہ کوئٹہ شہر میں حالیہ دہشتگردی کے جو واقعات ہوئے ہیں اس میں چھ افراد کا گروپ شامل ہیں ان میں ایک ملزم فضل حق ولد مولوی عبدالستار کو گرفتار کیا گیا ہے جبکہ دیگر کی تلاش جاری ہے۔

loading...

ملزم نے دوران تفتیش بہت سے اہم انکشاف کئے ہیں جس پر ہم تحقیقات کررہے ہیں ،انہوں نے کہاکہ دہشتگرد اب کوئٹہ میں خواتین کو بھی استعمال کررہے ہیں جو افسوسناک بات ہے افغانستا ن کی سرزمین کو پاکستان کیخلاف استعمال کیا جارہاہے۔

چرچ پر جو حملہ ہواتھا اوراس میں جو ہلاکتیں ہوئی تھی ان کو ابھی تک معاوضہ نہیں ملا یہ میرے علم میں نہیں اور جلد ان کو معاوضہ دیا جائیگا ۔چند دنوں سے دہشتگردوں نے کاروائیاں شروع کی تھی جس کا بروقت ہم نے سختی سے نوٹس لیا اور ہم دن رات کوشش کرکے دہشتگرد کو گرفتار کرنے میں کامیاب ہوگئے۔

مزید پڑھیں۔  کوہاٹ: چیف جسٹس نے میڈیکل کی طلبہ کے قتل کا از خود نوٹس لے لیا

 گزشتہ روز بھی جب کوئٹہ شہر میں جو واقعات ہوئے ہم نے دن رات بغیر نیند کئے ایف سی ،پولیس اور دیگر حساس اداروں نے ملکر کوشیش کی جس میں ہم کافی حد تک کامیاب ہوگئے انشاء اللہ بلوچستان کو امن کا گہوارہ بنائیں گے اور کسی کو بھی دہشتگردی کرنے کی کوشش کامیاب نہیں ہونے دیں گے اور ہر صورت میں صوبے میں امن وامان بحال رکھا جائیگا لوگوں کی جان ومال کا تحفظ ہماری حکومت کی ذمہ داری ہے جسے ہم ہر صورت میں پورا کرینگے ۔

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں