عمران خان طالبان کا بچھڑاہوا بھائی ہے، بلاول بھٹو

چیئرمین پیپلز پارٹی بلاول بھٹو زرداری نے اپنے سیاسی مخالفین کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ طالبان کا بچھڑا ہوا بھائی عمران خان نواز شریف ہی کی ایکسٹینشن ہے۔

گڑھی خدا بخش میں ذوالفقار علی بھٹو کی برسی کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ آج جسے دیکھو جمہوریت جمہوریت کا نعرہ لگا رہا ہے لیکن سب سے پہلے جمہوریت کا نعرہ ذوالفقار علی بھٹو نے لگایا تھا۔ان کا کہنا تھا کہ یہ پاکستان کوئی مذاق نہیں ہے، ذوالفقار علی بھٹو نے پاکستان کو متفقہ آئین دیا، مسلم امہ کو یکجہ کیا اور پاکستان کو ایک ایمٹی ملک بنانے میں اہم کردار ادا کیا۔بلاول بھٹو نے کہا کہ ذوالفقار علی بھٹو کو پھانسی پر لٹکا کر پاکستان کے سنہری دور کو بھی لٹکا دیا گیا اور آج تک پاکستان کا سنہرا دور پھانسی گھاٹ پر جھول رہا ہے۔انہوں نے کہا کہ ایک پاکستان بھٹو شہید کا پاکستان تھا جس میں امن و خوشحالی تھی، رواداری تھی، برداشت تھی اور بھٹو کے بعد کے پاکستان میں دہشت گردی اور انتہا پسندی ہے، پوری دنیا میں پاکستان کا نام رسوا کرنے کی کوشش کی جا رہی ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ جنرل ضیاء نے چن چن کر پیپلز پارٹی کے کارکنوں کو نشانہ بنایا لیکن جیالوں نے ذوالفقار بھٹو کا ساتھ نہیں چھوڑا۔بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ عمران خان اور نواز شریف ایک دوسرے کو اقتدار کے لیے نیچا دکھا رہے ہیں، دونوں کی منزل صرف اقتدار میں آنا اور پیسہ بنانا ہے۔ان کا کہنا تھا کہ عمران خان اور نواز شریف کی سیاست، معیشت اور منافقت ایک ہی ہے، طالبان کا بچھڑا ہوا بھائی عمران نواز شریف کی ہی توسیع ہے۔

چیئرمین پیپلز پارٹی کا کہنا تھا کہ اگر نواز شریف اور عمران نے عوام کی فلاح و بہبود کے لیے کچھ کام کیے ہوتے تو آپ پیپلز پارٹی کی مقبولیت سے گھبرا کر ہمارے خلاف پروپیگنڈا نہیں کرتے۔انہوں نے کہا کہ شہباز شریف نے 5 سالوں میں ایک بھی نئے اسپتال کا افتتاح نہیں کیا جب کہ خان صاحب نے خیبر پختونخوا میں اپنے ٹرسٹ کا اسپتال اور اپنے پراجیکٹ کی نمل یونی ورسٹی تو بنوا دی لیکن کوئی سرکاری اسپتال بنایا اور نہ ہی کوئی سرکاری یونیورسٹی بنوائی۔ان کا کہنا تھا کہ نواز شریف کی جانب سے ووٹ کی عزت کی مہم چلانے پر ہنسی آتی ہے، جس نے پوری زندگی ووٹ کی عزت نہیں کی وہ آج ووٹ کی عزت کی بات کر رہا ہے اور جس نے آج تک پارلیمنٹ کا تقدس نہیں کیا وہ آج پارلیمنٹ کے تقدس کی بات کر رہا ہے۔

بلاول بھٹو کا کہنا تھا کہ نواز شریف عدالتوں سے جنگ کرتے ہیں اور پھر ان کے وزراء شام کو عدالتوں جا کر معافیاں مانگتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ پیپلز پارٹی سب سے زیادہ عدالتوں سے متاثر ہوئی لیکن ہم نے ہمیشہ عدالتی فیصلوں کا احترام کیا۔بلاول بھٹو زرداری کا کہنا تھا کہ آج کا سب سے بڑا فرعون انتہا پسندی اور دہشت گردی ہے اور دہشت گردی کی وجہ انتہا پسندی ہے۔ان کا کہنا تھا کہ انتہا پسندی کو ختم کرنے کے لیے تعلیمی نصاب سے لیکر قومی پالیسی کو تبدیل کرنے کی ضرورت ہے اور پیپلز پارٹی واحد جماعت ہے جو انتہا پسندی اور دہشت گردی کا مقابلہ کر سکتی ہے۔

(Visited 5 times, 1 visits today)

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں