ایون فیلڈ ریفرنس کے فیصلے کے بعد نواز شریف کیساتھ اپنے اختلافات قوم کے سامنے رکھونگا ،چودھری نثار

چودھری نثار

ٹیکسلا: مسلم لیگ (ن) کے سینئر رہنماء اور سابق وفاقی وزیر داخلہ چودھری نثار علی خان نے کہا ہے کہ ایون فیلڈ ریفرنس کے فیصلے کے بعد سابق وزیراعظم محمد نواز شریف کے ساتھ اپنے اختلافات قوم کے سامنے رکھونگا

مسلم لیگ (ن) کو کون چلا رہا ہے؟، پارٹی کا صدر کون ہے ؟،کارکن تذبذب کا شکار ہیں،قمر الاسلام کی گرفتاری کی سب سے پہلے میں نے مذمت کی تھی، میرے حلقے میں جو بھی آجائے، مجھے اور عوام کو کوئی فرق نہیں پڑے گا۔ٹیکسلا میں میڈیا سے گفتگو میں سابق وفاقی وزیر داخلہ چودھری نثار علی خان نے کہاپرسوں ایون فیلڈ ریفرنس کا فیصلہ ہو جائے گا جس کے بعد میں سابق وزیراعظم محمد نواز شریف کے ساتھ اپنے اختلافات قوم کے سامنے رکھونگا۔

انہوں نے کہا کہ میرے اداروں سے تصادم نہ کرنے کے بیان پر میاں صاحب کو دکھ ہوا؟،کیا میں نے غلط کہا؟۔انہوں نے کہا کہ (ن) لیگ میں بہت خوفناک باتیں ہوتی رہی ہیں ، میں ردعمل دینا چاہتا تھا لیکن مجھے اجلاسوں میں بلانا بند کر دیا گیا، اس لئے میرا موقف سامنے نہیں آ سکا۔سابق وزیر داخلہ نے گزشتہ دنوں سابق وزیراعظم نواز شریف کی جانب سے دیئے گئے ممبئی حملہ کیس سے متعلق متنازع بیان کو بھی ملکی سلامتی کیخلاف قرار دیا۔انہوں نے کہا کہ مسلم لیگ (ن) کو کون چلا رہا ہے؟، پارٹی کا صدر کون ہے ؟اس حوالے سے کارکن تذبذب کا شکار ہیں۔

انہوں نے کہا کہ ایک پارٹی کا صدر کہتا ہے کہ اداروں سے ٹکراؤ پارٹی کا موقف نہیں، اگر یہ پارٹی کا موقف نہیں تو یہ گمنام ترجمان کون ہے؟۔ چودھری نثار نے کہا کہ اس بار 4 حلقوں سے الیکشن لڑ رہاہوں اور مجھے بہت اچھا رسپانس مل رہا ہے۔سابق وزیر داخلہ نے این اے 59 راولپنڈی سے اپنے مدمقابل لیگی امیدوار قمر الاسلام کی نیب کے ہاتھوں گرفتاری پر ردعمل دیتے ہوئے کہا کہ اس واقعے کی سب سے پہلے میں نے مذمت کی تھی۔انہوں نے کہا کہ میرے حلقے میں جو بھی آجائے، مجھے اور حلقے کے عوام کو کوئی فرق نہیں پڑے گا۔

(Visited 1 times, 1 visits today)
loading...

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں