حکومت انتقامی کارروائیوں سے گریز کرے، خورشید شاہ

قائد حزب اختلاف خورشید شاہ

پاکستان پیپلز پارٹی کے رہنماء اور قومی اسمبلی میں سابق لیڈر حزب اختلاف خورشید شاہ کا کہنا ہے کہ شہباز شریف کی اس انداز میں گرفتاری پارلیمان کی توہین ہے۔

نیب کی جانب سے آشیانہ ہاؤسنگ اسکینڈل میں شہباز شریف کی گرفتاری پر ردعمل دیتے ہوئے خورشید شاہ کا کہنا تھا کہ حکومت انتقامی کارروائیوں سے گریز کرے۔

خورشید شاہ نے شہباز شریف کی گرفتاری کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ 100 روزہ پروگرام کی ناکامی پر حکومت ایسے اقدامات اٹھا رہی ہے۔

رہنماء پیپلز پارٹی کا کہنا تھا کہ شہباز شریف کی اس انداز میں گرفتاری پارلیمان کی توہین ہے۔

سابق وزیر دفاع خرم دستگیر نے جیو نیوز سے بات کرتے ہوئے کہا کہ شہباز شریف ن لیگ کے صدر ہی نہیں اپوزیشن لیڈر بھی ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ گرفتاری کا مقصد شہباز شریف کو ڈرا کرمرعوب کرنا ہے لیکن شہباز شریف کی گرفتاری جیسے اوچھے ہتھکنڈے سے اپوزیشن کو مرعوب نہیں کیا جا سکتا۔

انہوں نے کہا کہ بہت جلد یہ لوگ خود شہباز شریف کو رہا کرنے پر مجبور ہوں گے، عوام اٹھیں گے اور خود انصاف کریں گے۔

مسلم لیگ ن کی پارلیمانی پارٹی کا شہباز شریف کی گرفتاری پر ردعمل دیتے ہوئے کہنا تھا کہ اسپیکر قومی اسمبلی کی اجازت کے بغیر اپوزیشن لیڈر کی گرفتاری خلاف قانون ہے۔

ن لیگ کے مطابق سیاسی مخالفت پر عبرت کا نشان بنانے کی روش پہلے بھی قوم کا نقصان کر چکی ہے۔

مسلم لیگ ن کے مطابق چین اور ترکی سمیت جس کو ساری دنیا نے شاباش دی اور اس کی مثال دی، نیب نے اسے گرفتار کر لیا۔

Spread the love
  • 3
    Shares

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں