ایف بی آر نے ٹیکس دہندہ کیلئے ایپلی کیشن کا آغاز کردیا

بے نامی جائیدادوں

اسلام آباد: فیڈرل بورڈ آف ریونیو (ایف بی آر) نے ٹیکس دہندہ کیلئے ایپلی کیشن کا آغاز کردیا۔یہ ایپلی کیشن ٹیکس دہندہ کو بغیر انٹرنیٹ استعمال کیے انکم ٹیکس ریٹرن اور مالی اسٹیٹمنٹ کی تیاری میں مدد دے گی۔

انٹرنیٹ استعمال کرنے والوں کو اکثر کنیکٹیوِٹی کے مسائل کا سامنا کرنا پڑتا ہے اس لیے ٹیکس دہندہ کے لیے یہ ایپلی کیشن خاصی مددگار ہوگی۔

سرکاری بیان کے مطابق نئی حکومت ٹیکس دہندہ کے لیے مزید سہولیات متعارف کرانے کی منصوبہ بندی کر رہی ہے، تاہم ساتھ ہی ٹیکس نادہندگان کو سزائیں دینے کے لیے بھی سخت اقدامات اٹھائے جائیں گے۔ ایپلی کیشن  آئرس اے ڈی ایکس’ ایف بی آر کے انفارمیشن ٹیکنالوجی وِنگ نے تیار کی ہے۔

loading...

ایپلی کیشن کے ذریعے ٹیکس دہندگان آف لائن موڈ میں اپنی اسٹیٹمنٹ تیار کرکے اسے ایف بی آر کو بلامشکل جمع کرا سکیں گے۔

گزشتہ سال ایف بی آر کو 16 لاکھ انکم ٹیکس ریٹرنز جمع ہوئے تھے، تاہم رواں مالی سال بورڈ کو 20 لاکھ ریٹرنز جمع ہونے کی امید ہے۔

واضح رہے کہ ٹیکس ریٹرن اور اسٹیٹمنٹ جمع کرانے کی آخری تاریخ 30 ستمبر تک بڑھادی گئی ہے۔

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں