حیوانیت کی انتہا، اسپتال میں 4 سالہ بچی کے ساتھ اجتماعی زیادتی

زیادتی

نئی دلی: جنسی جرائم بھارت کے ماتھے پر کلنک کا ٹیکہ تو بن ہی چکے ہیں مگر حیرت اس بات پر ہے کہ بھارتی معاشرے میں ایسے سفاکانہ جنسی جرائم بھی اب ایک معمول بن چکے ہیں

جن کا تصور کر کے ہی انسان کے رونگٹے کھڑے ہو جائیں۔ حیوانیت کا ایک ایسا ہی مظاہرہ ریاست اترپردیش کے ایک ہسپتال میں کیا گیا جہاں انتہائی نگہداشت وارڈ میں داخل چار سالہ بچی کو پانچ درندوں نے ہوس کا نشانہ بنا ڈالا۔
سکائی نیوز کے مطابق کمسن بچی کو سانپ کے کاٹنے کی وجہ سے اسپتال میں داخل کروایا گیا تھا۔ ہفتے کی رات جب وہ انتہائی نگہداشت وارڈ میں تنہا تھی تو ہسپتال کے ایک ملازم اور اس کے چار دوستوں نے اس معصوم کو اجتماعی درندگی کا نشانہ بنا ڈالا۔

loading...

اس حیوانیت کے باعث بچی کی حالت غیر ہو گئی، تاہم اُس نے اپنی دادی کو یہ ضرور بتا دیا کہ اُس کے ساتھ کیا ظلم ہوا تھا۔

پولیس کا کہنا ہے کہ سی سی ٹی وی کیمرے کی ریکارڈنگ حاصل کر لی گئی ہے اور ملزمان کی شناخت بھی معلوم ہو چکی ہے، مگر تاحال کسی گرفتاری کی خبر نہیں آئی۔

Spread the love
  • 2
    Shares

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں