سونے کے ذریعے جلد پر نکلے دانوں کا علاج

سونے
loading...

لندن: برطانیہ میں ماہرین نے سونے کے ذریعے چہرے پر نکلنے والے دانوں کا حیران کن علاج دریافت کر لیا ہے۔

اس نئے طریقے میں ماہرین سیلیکا کے باریک ذرات کو سونے میں لپیٹ کر مریض کے چہرے پر مساج کرتے ہیں جس سے یہ ذرات مساموں میں جذب ہو کر جلد کے اندر موجود تیل پیدا کرنے والے غدودں تک پہنچ جاتے ہیں۔

ایک بار جب یہ ذرات غدودں میں پہنچ جاتے ہیں تب ماہرین لیزر کے ذریعے انہیں گرم کرتے ہیں اور ان کے گرم ہونے سے غدود جل کر سکڑ جاتے ہیںجس کے نتیجے میں ان سے تیل کی پیداوار کم ہو جاتی ہے اور مریض کے چہرے پر دانے نہیں نکلتے۔

ماہر امراض جلد ڈاکٹر آئی لین چیو کا کہنا ہے کہ ” اس طریقہ علاج کے عام ہونے کے بعد دانوں سے نجات کے لیے استعمال ہونے والی سخت ادویات کی ضرورت باقی نہیں رہے گی۔ ہم مریضوں کو جتنی اینٹی بائیوٹکس دیتے ہیں وہ دانوں کا سبب بننے والے بیکٹیریا کو ختم کرتی ہیں۔

لیکن یہ طریقہ تیل پیدا کرنے والے غدودوں پر اثرانداز ہوتا ہے۔ اینٹی بائیوٹکس کے مضراثرات پورے جسم پر ہوتے ہیں اور آہستہ آہستہ بیکٹیریا ان کے خلاف مزاحمت بھی پیدا کر لیتے ہیں اور یہ بے اثر ہونے لگتی ہیں لیکن اس نئے طریقے میں یہ دونوں خطرات موجود نہیں ہیں اور اس سے جلد کو بھی نقصان نہیں پہنچتا۔“

Spread the love
  • 1
    Share

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں