سپریم کورٹ نے فیصلہ سنا دیا،این اے 131 میں دوبارہ گنتی ہو گی یا نہیں؟

سپریم کورٹ این اے

سپریم کورٹ نے لاہور ہائیکورٹ کا فیصلہ معطل کرتے ہوئے (این اے) 131 میں دوبارہ گنتی کے عمل روک دیا۔ چیف جسٹس پاکستان نے ریمارکس دیئے (این اے) 131 میں دوبارہ گنتی کی ضرورت نہیں۔ جسٹس اعجازاالاحسن نے کہا ایک بار نتیجہ بن گیا وہ حتمیٰ ہوگیا، ایسی درخواستیں سننا الیکشن کمیشن کا دائرہ اختیار ہے

اسلام آباد:   سپریم کورٹ میں حلقہ (این اے) 131 میں دوبارہ گنتی روکنے سے متعلق عمران خان کی درخواست پر سماعت ہوئی۔ چیف جسٹس نے ریمارکس دیئے الیکشن کمیشن کے دائرہ اختیار میں ہم کیسے مداخلت کرسکتے ہیں، ہم نے کل بھی ہائیکورٹ کا اس قسم کا ایک فیصلہ معطل کیا ہے۔

 وکیل سردار اسلم کا کہناہےکہ عمران خان 5 نشستوں سے انتخاب جیتے ہیں، اپنی پہلی تقریر میں عمران خان نے حلقے کھولنے کا کہا تھا۔ جس پر چیف جسٹس نے کہایہ سیاسی بیانات ہوتے ہیں، ہم سیاسی تقریروں کا جائزہ نہیں لے سکتے۔

 اس سے قبل خواجہ سعد رفیق نے (این اے 131) میں عمران خان کی کامیابی کو چیلنج کرتے ہوئے مسترد شدہ ووٹوں کی دوبارہ گنتی کی درخواست ریٹرننگ آفیسر کو دی تھی، ریٹرننگ آفیسر نے خواجہ سعد رفیق کی درخواست پر مسترد ووٹوں کی دوبارہ گنتی کے بعد چیئرمین تحریک انصاف کی کامیابی کو برقرار رکھا۔

عمران خان کو خواجہ سعد رفیق پر 680 ووٹوں کی برتری حاصل تھی لیکن مسترد ووٹوں کی دوبارہ گنتی کے بعد یہ برتری کم ہو کر 608 رہ گئی۔ جس پر خواجہ سعد رفیق نے مکمل ووٹوں کی دوبارہ گنتی کی درخواست کی جسے آر او نے مسترد کر دیا تھا۔

خیال رہے لاہور ہائیکورٹ نے سابق وزیر ریلوے خواجہ سعد رفیق کی درخواست پر (این اے) 131 میں دوبارہ گنتی کا حکم دیتے ہوئے الیکشن کمیشن کو عمران خان کی کامیابی کا نوٹیفکیشن جاری کرنے سے روکنے کی ہدایت کی تھی۔

ادھر سپریم کورٹ نے این اے 182 مظفر گڑھ میں جمشید دستی کی دوبارہ گنتی کی درخواست مسترد کردی۔ عدالت نے جمشید دستی کو الیکشن ٹریبونل میں جانے کی ہدایت کر دی۔

Spread the love

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں