افغانستان: طالبان کے دہشت گرد حملے، 8 سکیورٹی اہلکار ہلاک، 3 زخمی

افغانستان
loading...

کابل: افغانستان میں طالبان کے تازہ دہشت گرد حملوں کے باعث 8 سکیورٹی اہلکار ہلاک اور تین زخمی ہوگئے۔

تفصیلات کے مطابق شدت پسندوں نے اس بار افغان صوبہ فراہ کو نشانہ بنایا، جس کے نتیجے میں آٹھ پولیس اہلکار مارے گئے اور 3 زخمی ہیں۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق عسکریت پسندوں نے مغربی صوبے فراہ میں قائم دو چیک پوسٹوں کو نشانہ بنایا، حکام نے حملوں کی تصدیق کردی۔

حکام کا کہنا ہے کہ جنگجوؤں نے صوبائی دارالحکومت کے نواح ميں دو مختلف چيک پوائنٹس پر حملہ کيا۔
اس سے قبل گذشتہ دنوں طالبان نے اسی صوبے میں دہشت گرد حملے کیے تھے۔

طالبان نے فراہ صوبے میں ہی ميں ايک حملے ميں افغان سکيورٹی فورسز کے بيس اہلکاروں کو ہلاک اور بيس ديگر کو اغواء کر ليا تھا۔
دوسری جانب افغانستان سے متلق حالیہ جاری ہونے والی ایک امریکی رپورٹ میں انکشاف کیا گیا ہے کہ گزشتہ تین سال کے دوران افغانستان پر طالبان کے کنٹرول میں اضافہ ہوا۔

خیال رہے کہ رواں سال نومبو کو امریکی اسپیشل انسپکٹر جنرل برائے تعمیرِ نو افغانستان (SIGAR) نے رپورٹ جاری کی تھی کہ حالیہ برسوں میں افغانستان پر طالبان کا کنٹرول بڑھا ہے۔

رپورٹ میں بتایا گیا تھا کہ 2015 میں افغان حکومت کا 72 فی صد علاقوں پر کنٹرول تھا، موجودہ کنٹرول 407 اضلاع میں 55.5 فی صد رہ گیا ہے، افغان حکومت اور فوج اپنا کنٹرول قائم رکھنے میں نا کام ہے۔

Spread the love
  • 2
    Shares

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں