بحریہ ٹاؤن کراچی کے ٹھیکیداروں، پراپرٹی ڈیلرز، ملازمین کا احتجاج

بحریہ ٹاؤن

کراچی : مالی مشکلات کی وجہ سے بحریہ ٹاﺅن کراچی کی گزشتہ رات بتیاں بھی بند کردی گئیں جس کی وجہ سے رہائشی اور سرمایہ کار پریشان ہوگئے جبکہ ہزاروں ملازمین کو تنخواہیں نہیں دی جاسکیں۔

ہفتہ کو بحریہ ٹاﺅن کے ٹھیکیدار، مزدور ، پراپرٹی ڈیلرز، اوورسیز پاکستانیوں کی فیملیز اور عام شہری سڑکوں پر آگئے ۔ احتجاج کے باعث سپرہائی کے دونوں ٹریک ٹریفک کے لیے بند ہوگئے ہیں جبکہ ڈی ایچ اے میں بھی اسی طرح کی صورتحال کا خدشہ ہے۔

 بحریہ ٹاﺅن میں موجود ذرائع کے حوالے سے بتایا کہ عدالتی احکاما ت پر عمل درآمد یقینی بنانے کے لیے پیسے کا رخ موڑ دیا گیا اور اس کی وجہ سے تنخواہوں کی ادائیگی سے قاصر ہیں اور کنٹریکٹ منسوخ کردیئے گئے ہیں۔  یہاں تک کہ روشنیاں آن رکھنا بھی محال ہوگیا جبکہ بحریہ ٹاﺅن کے پینتالیس ہزار ملازمین کی تنخواہیں بھی نہیں دی جاسکیں۔  بحریہ ٹاﺅن کے حکام نے بتایا کہ وہ فنڈ ز ریلیز کروانے کے لیے درخواست کر رہے ہیں تاکہ معمول کے اخراجات ادا کیے جاسکیں۔

دوسری طرف سے بحریہ ٹاﺅن سے وابستہ ٹھیکیداروں، مزدوروں ، اورسیز پاکستانیوں کی فیملیز نے ڈی ایچ اے خیابان توحید سے ریلی نکالی جو بحریہ ٹاﺅن سپر ہائی وے پر جائے گی ۔

مظاہرین کا کہنا تھا کہ حکومت سرمایہ کاری کا حکومت تحفظ کرے، بحریہ ٹاﺅن کے اکاﺅنٹس بحال کیے جائیں، کام رکنے کی وجہ سے تنخواہیں نہیں مل رہیں، پانچ ہزار ملازمین کو چھ ماہ سے تنخواہیں اور اوورٹائم نہیں مل سکا۔

ہمارے گھروں میں فاقوں کی نوبت آچکی ہے، بچوں کے اسکولوں کی فیسیں ادانہیں کرپارہے، بلاواسطہ اور بلواسطہ 20 ہزار سے زائد افراد متاثر ہورہے ہیں۔متاثرہ فیملیز کا کہنا تھا کہ پانچ سال قسطیں جمع کرانے کے بعد ہم کہاں کھڑے ہیں، ان کی ساری زندگی کی جمع پونجی ضائع ہونے کا خطرہ ہے ۔

بحریہ ٹاﺅن  کے ملازمین تنخواہیں نہ ملنے کے سبب کراچی سپر ہائی وے پر احتجاج کر رہے ہیں جس کے باعث ہائی وے پر ٹریفک جام ہوگیا اور گاڑیوں کی لمبی قطاریں لگ گئی جب کہ کراچی کا اندرون سندھ سے رابطہ منقطع ہوگیا۔

مظاہرین نے وزیراعظم اور چیف جسٹس سے نوٹس لینے کی اپیل کرتے ہوئے کہا کہ وہ اس معاملے کو حل کروائیں اور ہمارے مطالبات پورے کیے جائیں۔ دوسری جانب بحریہ ٹاﺅن کے اسٹیٹ ایجنٹس اور سرمایہ کار بھی ڈیفنس میں احتجاج کر رہے ہیں اور انہوں نے احتجاج کے لیے بحریہ ٹاﺅن جانے کا اعلان کر رکھا ہے۔

Spread the love

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں