محنت کش افراد کسی بھی صنعت ومعیشت کیلئے ریڑھ کی ہدی کی رکھتے ہیں، ڈاکٹر حسن عسکری

محنت

لاہور: نگران وزیراعلیٰ پنجاب ڈاکٹر حسن عسکری نے کہا ہے کہ محنت کشوں کا معیشت کو مضبوط بنیادوں پر استوار کرنے میں کلیدی کردار ہے اور ا فرادی قوت کسی بھی صنعت ومعیشت کیلئے ریڑھ کی ہڈی کی حیثیت رکھتی ہے ،

اسی لئے محنت کش طبقے کوجائز مقام دیئے بغیر پائیدار سماجی و اقتصادی ترقی کا ہدف پورا نہیں ہوسکتا۔ نگران وزیراعلیٰ ڈاکٹر حسن عسکری نگران صوبائی وزیربرائے محنت و انسانی وسائل اورٹرانسپورٹ نعمان کبیر سے گفتگو کر رہے تھے جنہوں نے وزیراعلیٰ آفس میں ان سے ملاقات کی، جس میں محکمانہ اموراور محکموں کی کارکردگی پر تبادلہ خیال کیا گیا۔ نگران وزیراعلیٰ نے کہا کہ اسلامی جمہوریہ پاکستان کا آئین مزدوروں کے حقوق کو تحفظ فراہم کرتا ہے او رہماری حکومت محنت کش طبقات کی حالت بہتر بنانے پر بھرپور توجہ دے رہی ہے۔

مزدوروں اور محروم معیشت طبقات کومعاشرے میں جائزمقام دینا حکومت کی ذمہ داری ہے، اسی لئے مزدوروں اورصنعتی کارکنوں کیلئے تعلیم و صحت کی معیاری سہولتیں مہیا کرنا ہر حکومت کی ترجیحات میں شامل ہونا چاہیئے کیونکہ محنت کشوں اور مزدوروں کا استحصال کرنے والے معاشرے کبھی آگے نہیں بڑھتے۔انہو ں نے کہا کہ معیاری ہنرمند افرادی قوت معیشت کو مضبوط بنیادوں پر استوار کرنے میں اہم کردارادا کرتی ہے اور اسی اہمیت کے پیش نظر مارکیٹ کی ضروریات کے مطابق ہنر مند افرادی قوت کی تیاری پر خصوصی توجہ دینے کی ضرورت ہے تاکہ مقامی صنعت کی ضروریات پوری کی جاسکیں اور بین الاقوامی سطح پر بھی پاکستان کی افرادی قوت کی زیادہ سے زیادہ کھپت ہو سکے۔

انہوں نے کہا کہ معیاری افردی قوت تیار کرنے کیلئے سکل ڈویلپمنٹ پروگرام پر تسلسل اور جدت کے ساتھ عملدرآمد کرنا ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ صوبہ بھر میں مزدوروں اورکارکنوں کے حقوق کا تحفظ یقینی بنایا جائے اور بھٹہ مزدوروں کے حقوق کے استحصال کو روکنے کیلئے قانون کے تحت اقدامات تسلسل کے ساتھ جاری رکھے جائیں۔ بچوں سے مشقت کرانا ایک ناسور ہے اور حکومت کو ٹھوس اقدامات کے ذریعے ہر سطح پر چائلڈ لیبر کا خاتمہ کرنا ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ پنجاب میں لائیوسٹاک سیکٹر میں بہت پوٹینشل موجود ہے اور لائیوسٹاک سیکٹر کے پائیدار بنیادوں پر فروغ سے صوبے کی معیشت کو بے پناہ فائدہ پہنچے گا۔ انہوں نے کہا کہ پنجاب کے لائیوسٹاک کے شعبے کو جدید ٹیکنالوجی کے ذریعے ترقی یافتہ ممالک کے مقابل لایا جا سکتا ہے اور لائیوسٹاک کو فروغ دے کر دودھ اورگوشت کی پیداوار بڑھانے کیلئے اقدامات کرنے کی ضرورت ہے۔

انہوں نے کہا کہ زراعت، لائیوسٹاک اور دیگر شعبوں میں موجود مواقع سے فائدہ اٹھانا وقت کا تقاضا ہے اورپیداواری صلاحیت بڑھانے کے لئے تربیت کا معیار بھی بہتر بنانا ہوگا۔نگران صوبائی وزیر نعمان کبیر نے محنت و انسانی وسائل،لائیوسٹاک اورٹرانسپورٹ کے محکموں کی کارکردگی کے بارے میں نگران وزیراعلیٰ کو آگاہ کیا۔

Spread the love

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں