میٹر ریڈنگ کے جدید طریقے کے بعد واپڈا نے رشوت لینے کا نیا طریقہ ایجاد کر لیا۔

loading...

قصور : واپڈا والوں نے عوام کا جینا دوبر کررکھا ہے کھڈیاں ایسٹ سب ڈویژن نور پور ایس ڈی او واپڈا ملک رشید نے اپنے کرپٹ ملازمین کے ساتھ مل رشوت کا بازا ر گرم کیا ہوا ہے ۔
ایس ڈی او واپڈا نے اپنے ماتحت ملازمین کے ساتھ مل کر رشوت لینے کا نیا طریقہ ایجاد کرلیا ہے. ڈیلی کی بنیاد پر مختلف ٹیموں کی شکل میں اپنے ملازمین کو علاقے میں نام نہاد سرچ آپریشن کرواتا ہے جو علاقے میں ایسے غریب اور لاچار لوگوں کے گھروں میں جا کر ان کے میڑ چیک کرتے ہیں جن کی رسائی کسی بھی اعلیٰ عہدیدار تک نہیں ہوتی وہ اُن غریب لوگوں کومختلف طریقوں سے بلیک میل کرتے ہیں کہ “آپ کا میڑ خراب ہے” “اسکی سپیڈ کم ہے ہیڑ چلاؤ” ، “پمپ چلاؤ آپ کا بل کم آتا ہے” ، وغیرہ وغیرہ جب کہ ابھی بھی دیہاتوں میں 10 سے 15گھنٹے کی غیر اعلانیہ لوڈشیڈنگ کی جارہی ہے بندے کو اس طرح انڈر پریشر کرتے ہیں اور بندے سے رشوت کی ڈیمانڈکرتے ہیں چونکہ دیہاتوں میں اکثر لوگ کم پڑھے لکھے اوربے روزگار ہیں جو ان کی دھمکیوں سے ڈر تے ہوئے اُن کی منت سماجت کرتے ہیں اور ان کو رشوت دے کر اپنی جان چھوڑا لیتے ہیں ، جولوگ ان کو رشوت نہیں دیتے ان کو اگلے مہینے میں 20سے 25 ہزار کا بل ڈال دیتے ہیں ۔ بل کو ٹھیک کروانے واپڈا کے آفس جانے والوں کو ایس ڈی او صاحب گالیاں دیتے ہوئے اپنے آفس سے باہر نکلوا دیتے ہے ۔ جس کی وجہ سے بیچارہ غریب سائل گھرسے ضررویات زندگی کی مختلف اشیاء فروخت کر کے انتہائی مجبوری کے عالم میں بل جمع کرواتاہے ۔ حکومت سے اپیل ہے کہ ایسے نام نہاد رشوت خور آفیسرز سے عوام کی جان چھڑوائی جائے۔

Spread the love

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں