توہین عدالت کیس: پیپلز پارٹی کے سابق سینیٹر فیصل رضا عابدی گرفتار

فیصل رضا عابدی
loading...

اسلام آباد: توہین عدالت کیس میں پیپلز پارٹی کے سابق سینیٹر فیصل رضا عابدی کو گرفتار کر لیا گیا، پولیس کا کہنا ہے کہ فیصل رضا عابدی کو ایک اور مقدمے میں گرفتار کیا گیا۔

تفصیلات کے مطابق توہین عدالت کیس میں فیصل رضاعابدی کو سپریم کورٹ میں پیشی کے بعد سیکرٹریٹ پولیس نے گرفتار کرلیا اور انھیں تھانہ سیکرٹریٹ منتقل کردیا گیا ہے۔

پولیس کا کہنا ہے کہ فیصل رضا عابدی کو ایک اور مقدمے میں گرفتار کیا گیا ہے، توہین عدالت سے متعلق ایک اور مقدمہ گزشتہ رات تھانہ سیکریٹریٹ میں درج کیا گیا تھا۔

اس سے قبل سپریم کورٹ میں جسٹس عظمت سعید کی سربراہی میں دو رکنی بینچ نے فیصل رضا عابدی کے خلاف توہین عدالت کیس کی سماعت کی ،جس میں عدالت نے فیصل رضاعابدی سے تحریری جواب طلب کیا اور اٹارنی جنرل کو نوٹس جاری ک ردیئے۔

فیصل رضاعابدی کا کہنا تھا کہ وکیل عمرے کی ادائیگی کے لیے گیا ہے 22 اکتوبر کو واپسی ہوگی، اس لیےعدالت سے مہلت مانگی، عدالت نے 30 تاریخ کو جواب جمع کرانے کا حکم دیا ہے، عدالتی حکم کے مطابق جواب جمع کرا دیا جائے گا۔

فیصلے سے قبل روسٹرم چھوڑنے پر جسٹس عظمت سعید شیخ نے ریمارکس میں کہا عابدی صاحب آرڈر لکھوانے تک ہمیں تنہانا چھوڑیں۔
بعد ازاں عدالت نے وکیل کی عدم دستیابی پرسماعت 30اکتوبر تک ملتوی کردی۔ یاد رہے دو اکتوبر کو اسلام آباد کی انسداد دہشت گردی کی عدالت نے فیصل رضا عابدی کی ضمانت گیارہ اکتوبر تک منظور کرتے ہوئے ایک لاکھ کے مچلکے جمع کرانے کا حکم دیا تھا۔

مزید پڑھیں۔  بچوں کی شاہی شادی کے سوشل میڈیا پر چرچے

واضح رہے کہ چیف جسٹس آف پاکستان جسٹس میاں ثاقب نثار کے خلاف نازیبا الفاظ بولنے کے معاملے پر پیپلز پارٹی کے سابق سینیٹر فیصل رضا عابدی کے خلاف 21 ستمبر کو انسداد دہشت گردی کی دفعات کے تحت مقدمہ درج کیا گیا تھا۔

اسلام آباد کے تھانہ سیکٹریٹریٹ میں مقدمہ سپریم کورٹ کی مدعیت میں درج کیا گیا تھا۔ پولیس کا کہنا تھا کہ فیصل رضا عابدی نے ایک ٹی وی پروگرام میں چیف جسٹس کے خلاف نازیبا الفاظ استعمال کیے تھے۔ ایف آئی آر میں

مذکورہ پروگرام کے اینکر کا نام بھی درج کیا گیا ہے اور اس کے خلاف بھی کارروائی کی جائے گی۔
خیال رہے کہ فیصل رضا عابدی سنہ 2009 سے 2013 تک پی پی کے سینیٹر رہے۔ اس دوران وہ کئی قائمہ کمیٹیوں کے رکن بھی رہے۔

Spread the love
  • 10
    Shares

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں