اصغر خان کیس میں پیپلز پارٹی کے رہنماء رحمن ملک، امتیاز شیخ اور یونس حبیب کا ایف آئی کے سامنے پیش ہونے سے انکار

کیس

اسلام آباد: اصغر خان کیس میں پیپلز پارٹی کے رہنماء رحمن ملک، امتیاز شیخ اور یونس حبیب نے ایف آئی کے سامنے پیش ہونے سے انکار کر دیا ہے۔

ذرائع کے مطابق ایف آئی اے کی جانب سے گزشتہ روز رحمن ملک، یونس حبیب، امتیاز شیخ، ایڈوکیٹ یوسف میمن، جام معشوق اور جام حیدر آفاق کو پیر کو پیشی کیلئے نوٹس جاری کیا تھاجس پر ایڈووکیٹ یوسف میمن، جام معشوق اور جام حیدر آفاق احمد ایف آئی اے کے روبرو پیش ہو ئے۔

نجی ٹی وی نے ذرائع کے حوالے سے بتایا ہے کہ رحمن ملک نے ایف آئی اے حکام کو فون پر جواب دیا کہ میڈیا سے بچ رہا ہوں اس لئے اس کیس میں حاضر نہیں ہو سکتا۔نجی ٹی وی سے گفتگو کرتے ہوئے سابق وزیر داخلہ رحمن ملک نے کہا کہ ایف آئی اے نے مجھے طلب نہیں کیا تھا بلکہ رہنمائی کیلئے خط لکھا تھا۔

انہوں نے کہا کہ جس وقت اصغرخان کیس پیش آیا تو اس وقت میں ایڈیشنل ڈی جی ایف آئی اے تھا، قانون کی روشنی میں ایف آئی اے کی رہنمائی کو تیار ہوں۔انہوں نے کہا کہ ایف آئی اے کا خط تاخیر سے ملا، طبیعت ناساز ہے اس لئے نہ جا سکا۔یونس حبیب نے ایف آئی اے کو اپنے تحریری جواب میں کہا کہ میں طبیعت کی ناسازی کے باعث پیش نہیں ہو سکتا۔

ذرائع کے مطابق پیپلز پارٹی کے رہنما امتیاز شیخ نے بھی اصغر خان کیس میں ایف آئی اے کے سامنے پیش ہونے سے انکار کر دیا ہے۔

مزید پڑھیں۔  پیپلز پارٹی نے ہمیشہ اصولوں پر سیاست کی ہے، آصف زرداری

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں