چقندر کھائیں اور صحت پائیں

چقندر کھانے

چقندر شلجم سے مشابہ ایک سبزی ہے ،جو گہرے سرخ رنگ کی ہوتی ہے۔ چقندر دنیا کے کئی ممالک میں گول ،چپٹی ،لمبی اور بیضوی شکلوں میں پایا جاتا ہے۔ دنیا بھر میں لوگ چقندر کھاتے ہیں.

پاکستان میں زیادہ ترگول اور بیضوی شکل کا چقندر ملتا ہے ۔یہ نہ صرف غذائیت سے بھرپور ہوتا ہے ،بلکہ کئی امراض کے خاتمے کے لیے بھی مفید ہے ۔ایران میں چقندر کا سُوپ بہت مقبول ہے ۔آئرلینڈ کے ساحلی علاقوں میں رہنے والے افراد اس کے پّتے بہت شوق سے کھاتے ہیں ۔

چقندر کھانے سے جسم کے فاسد مادّے خارج ہوجاتے ہیں ۔بعض افراد اس کا رس شوق سے پیتے ہیں ۔جو افراد خون کی کمی میں مبتلا ہوں، چقندر ان کے لیے ایک نعمت ہے۔ اس میں موجود فولک ایسڈ اور حیاتین ج(وٹامن سی)خون بنانے میں بہت مدد گار ثابت ہوتے ہیں۔ خون کی کمی میں مبتلا افراد سے روزانہ سلاد میں شامل کرکے کھائیں انھیں بہت فائدہ ہو گا ۔

قوتِ مدافعت میں اضافہ

یہ قوتِ مدافعت میں بھی اضافہ کرتا ہے۔ چقندر کا رس ہائی بلڈ پریشر ،شریانوں کی بندش ،پھُولی ہوئی وریدوں اور دل کی تکلیف سے نجات دلاتا ہے ۔ جو افراد ہائی بلڈ پریشر کا شکار ہوں انھیں چاہیے کہ وہ اس کا رس پییں۔

ان کا بلڈ پریشر معمول پر آجائے گا ۔بعض افراد چقندر کے رس میں گا جر کا رس ملا کر بھی پیتے ہیں ،جو زیادہ افادیت کا حامل ہے ۔

آلو کھائیں، وزن گھٹائیں!

موٹاپا کم کرتا ہے

جو افراد فربہ ہوں ،انھیں چاہیے کہ وہ چقندر کو اپنی غذا کا لازمی حصہ بنا لیں ،اس لیے کہ اس میں حرارے (کیلوریز)بہت کم ہوتے ہیں ،لہٰذا وزن نہیں بڑھتا ،بلکہ اس میں کمی ہونے لگتی ہے ۔

loading...

چقندر

داغ دھبّے اور جھائیاں کو ختم کرے

چقندر کا رس چہرے کے داغ دھبّوں اور جھائیوں کو ختم کر دیتا ہے۔ ایک چقندر کا ٹ کر پانی میں اُبال لیں ۔ پانی ٹھنڈا ہونے پر اس میں صاف روئی کے ٹکڑے کو بھگو کر چہرے پر خوب اچھی طرح لگائیں اور تقریباً دس منٹ کے بعد چہرہ دھو لیں ۔چہرے کی جِلد نکھر جائے گی اور داغ دھبّے وجھائیاں بھی ختم ہو جائیں گی ۔بالوں کی صحت کے لیے بھی چقندر مفید ہے ۔

چقندر

سر کی خشکی ختم کرتا ہے

سر کی خشکی ختم کرنے کے لیے ایک عدد چقندر چھلکے سمیت کاٹ لیں اور اسے پتوں سمیت پانی میں اُبال لیں ۔ جب پانی ٹھنڈا ہو جائے تو اُسے خوب اچھی طرح بالوں میں لگائیں ۔ ہفتے میں دوباریہ عمل کرنے سے سر کی خشکی بالکل ختم ہو جاتی ہے ۔

چقندر

آج سے ہی اپنی غذا میں چقندر شامل کریں. چقندر کھائیں اور صحت پائیں

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں