ڈیم فنڈ میں کروڑوں کی جائیداد دینے والے کے اہل خانہ سپریم کورٹ پہنچ گئے

چیف جسٹس

ڈیم فنڈ میں 8 کروڑ روپے کی جائیداد دینے والے شخص کے اہل خانہ سپریم کورٹ لاہور رجسٹری میں پہنچ گئے۔

شاہد شیخ نامی شخص نے ڈیم فنڈ میں 8 کروڑ روپے کی جائیداد عطیہ کی تھی، ان کی اہلیہ اور 3 بیٹے سپریم کورٹ لاہور رجسٹری پہنچے تو چیف جسٹس نے انہیں چیمبر میں طلب کرلیا۔

مذکورہ معاملے سے متعلق چیف جسٹس نے شاہد شیخ کی اہلیہ سے پوچھا کہ کیا خاوند کے ساتھ آپ کے تعلقات ٹھیک ہیں؟ جس پر انہوں نے جواب دیا کہ تعلقات ٹھیک ہیں مگر ان کا ذہنی توازن درست نہیں ہے۔

اس موقع پر ایڈیشنل ایڈووکیٹ جنرل نے بتایا کہ شاہد شیخ نے 8 جائیدادیں ڈیم فنڈ میں دینے کا اعلان کیا تھا۔ جس پر چیف جسٹس نے ریمارکس دیے کہ آپ تسلی رکھیں آپ کی جائیداد ڈیم فنڈ میں نہیں لیں گے، جائیداد پر بچوں کا شرعی حق ہے جو ان سے نہیں چھینا جائے گا۔

بعد ازاں چیف جسٹس نے شاہد شیخ کی جائیداد سے متعلق رپورٹ طلب کرتے ہوئے کہا کہ شاہد شیخ کا ذہنی توازن کسی اچھے ڈاکٹر سے چیک کروایا جائے۔

loading...

خیال رہے کہ رواں برس جولائی میں سپریم کورٹ آف پاکستان نے دیامر بھاشا ڈیم اور مہمند ڈیم کی فوری تعمیر کا حکم دیتے ہوئے چیئرمین واپڈا کی سربراہی میں کمیٹی قائم کی تھی۔

چیف جسٹس نے ڈیموں کی تعمیر کے لیے عطیات کا خصوصی اکاؤنٹ بنانے کی ہدایت کی تھی اور اندرون ملک و بیرونی ممالک میں مقیم پاکستانیوں سے ڈیم کی تعمیر کے لے عطیات دینے کی اپیل کی تھی۔

اس ہدایت کے ساتھ ہی چیف جسٹس نے اپنی جانب سے 10 لاکھ روپے ڈیم فنڈ میں عطیہ کرنے کا اعلان کیا تھا۔

بعد ازاں وزارت عظمیٰ کا منصب سنبھالنے کے بعد ڈیم تعمیر کرنے کی اس مہم میں وزیر اعظم عمران خان قوم سے اپنے دوسرے خطاب میں انہوں نے پاکستانیوں سے ڈیم بنانے کے لیے اپنا حصہ ڈالنے پر زور دیتے ہوئے اپیل کی تھی کہ بیرون ملک پاکستانی وہ ڈیم بنانے کے لیے فنڈ میں ڈالرز بھیجیں۔

ڈیم فنڈ میں وزیراعظم کی شمولیت کے بعد اکاؤنٹ ٹائٹل ’ سپریم کورٹ وزیر اعظم فنڈ برائے دیامر بھاشا اور مہمنڈ ڈیم‘ رکھنے کی منظوری دے دی تھی۔

Spread the love
  • 3
    Shares

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں