سب انسپکٹر تشدد کیس: استعفیٰ دے دوں گا مگر بےانصافی نہیں کروں گا، چیف جسٹس

چیف جسٹس

لاہور: سب انسپکٹر پر وکلا کے تشدد سے متعلق ازخود نوٹس کی سماعت کے دوران سپریم کورٹ نے نامزد وکلا کی گرفتاریوں سے متعلق حکم امتناع جاری کرنے کی استدعا مسترد کردی۔

تفصیلات کے مطابق سپریم کورٹ لاہور رجسٹری میں چیف جسٹس میاں ثاقب نثار کی سربراہی میں سب انسپکٹرپروکلا کے تشدد سے متعلق ازخود نوٹس کی سماعت ہوئی۔

عدالت نے سماعت کے دوران انسداد دہشت گردی کی دفعات معطل کرنے اور وکلا کی گرفتاریوں سے متعلق حکم امتناع جاری کرنے کی استدعا مسترد کردی۔

loading...

چیف جسٹس آف پاکستان نے ریمارکس دیے کہ استعفیٰ دے دوں گا مگر بے انصافی نہیں کروں گا۔ سپریم کورٹ نے وکلا کی جانب سے سب انسپکٹر پرتشدد کی ویڈیو آئندہ سماعت پر طلب کرلی، چیف جسٹس نے کہا کہ آئندہ سماعت پرویڈیوعدالت میں چلا کرذمے داران کا تعین کریں گے۔

چیف جسٹس نے گزشتہ ہفتے لاہور میں سب انسپکٹرپروکلا کے تشدد کا نوٹس لیتے ہوئے آئی جی پنجاب کو 13 اکتوبرکو واقعے کی رپورٹ پیش کرنے کا حکم دیا تھا۔

واضح رہے کہ گزشتہ دنوں لاہور ڈسٹرکٹ بار کے وکلا نے سب انسپکٹر پرتشدد کیا تھا جس کی ویڈیو سوشل میڈیا پروائرل ہوگئی تھی۔

Spread the love
  • 6
    Shares

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں