گلوبل وارمنگ سے متاثرہ ممالک میں پاکستان کا ساتواں نمبر۔۔۔ صاف و سبز پاکستان مہم کا آغاز

loading...

وزیرِاعظم عمران خان نے پاکستان کو سرسبز و شاداب بنانے کے لیے کلین اینڈ گرین پاکستان (صاف و سبز پاکستان) مہم کا آغاز کردیا۔

اسلام آباد کے ایک کالج میں سبز و صاف پاکستان مہم کا آغاز کرتے ہوئے وزیرِاعظم عمران خان نے ایک پودا لگایا اور طالب علموں کے ساتھ صفائی میں بھی حصہ لیا۔

تقریب کے دوران خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم نے بتایا کہ گلوبل وارمنگ سے متاثرہ ممالک میں پاکستان کا نمبر ساتھواں ہے۔

انہوں نے کہا کہ ملک میں درختوں کے ساتھ ساتھ پانی کی بھی کمی ہے، درجہ حرارت بڑھنے کی وجہ سے دریاؤں میں پانی زیادہ ہوجاتا ہے اور سیلاب آجاتے ہیں۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ ملک میں درخت لگا کر گلوبل وارمنگ اور درجہ حرارت کو کچھ حد تک کنڑول کیا جاسکتا ہے اور انہی کی وجہ سے زیرِ زمین پانی کی سطح بھی اوپر آئے گی۔

کینسر ہسپتال کی چندہ مہم کے حوالے سے بات کرتے ہوئے وزیرِ اعظم عمران خان کا کہنا تھا کہ ’میں شوکت خانم اسپتال کے فنڈ کے لیے کراچی سے خیبر تک کے کالجز میں گیا، اور اس کی تعمیر میں سب سے زیادہ تعاون طالب علموں نے ہی کیا‘۔

انہوں نے بتایا کہ پاکستان کے اسکولوں کے بچوں نے ہی شوکت خانم ہسپتال کے لیے کامیاب مہم کی۔

صاف و سبز پاکستان مہم کے حوالے سے بات کرتے ہوئے وزیرِ اعظم عمران خان کا کہنا تھا کہ ملک بھر میں 10 ارب درخت لگانا ان کی حکومت کا ہدف ہے۔

انہوں نے امید کا اظہار کیا کہ 10 ارب درختوں سے پاکستان میں بارشوں کا سسٹم تبدیل ہو سکتاہے۔

اپنی مہم کے بارے میں مزید وضاحت دیتے ہوئے عمران خان نے کہا کہ صفائی مہم کے ذریعے کچی آبادیاں بھی صاف کرنی ہیں، کیونکہ دیہاتی علاقوں میں لوگ دریاؤں میں بھی آلودگی پھیلاتے ہیں۔

وزیرِاعظم نے کہا کہ ’یورپ کے ممالک کے میں آلودگی نہیں ہے اور وہاں کے دریا بھی صاف ہیں، پاکستان کو بھی اسی طرح صاف کرنا ہے تاکہ جب کوئی پاکستانی یورپ جائے گا اور واپس پاکستان آئے گا تو اسے یہ ملک یورپ سے بھی زیادہ صاف نظر آئے گا‘۔

Spread the love
  • 17
    Shares

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں