بے نامی اکاؤنٹس کو پیپلزپارٹی سے منسلک کرنے پر پارٹی اراکین برہم

بے نامی اکاؤنٹس

کراچی: بے نامی اکاؤنٹس کو پیپلزپارٹی سے منسلک کرنے پر پارٹی رہنماؤں نے ناراضی کا اظہار کردیا۔

اکاؤنٹس کو پیپلزپارٹی کے ساتھ جوڑنا زیادتی: کائرہ

لاہور میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے پیپلزپارٹی کے رہنما قمر زمان کائرہ نے کہا کہ بے نامی اکاؤنٹس کو پیپلزپارٹی کے ساتھ جوڑنا زیادتی ہے، آصف زرداری کا امیج خراب کرنے کی کوشش ہورہی ہے، ان کے خلاف کیسز پہلے بھی بنے جس میں نہ ماضی میں کچھ نکلا نہ اب کچھ ہے لہٰذا پگڑیاں اچھالنے کا سلسلہ اب ختم ہونا چاہیے۔

فالودہ والے کے اکاؤنٹس پیپلزپارٹی سے جوڑے جاتے ہیں: ناصر شاہ

دوسری جانب کراچی میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے پی پی رہنما ناصر شاہ کاکہنا تھا کہ فالودہ والے کے اکاؤنٹس پیپلزپارٹی سے جوڑے جاتے ہیں، جن کے نام پر اکاؤنٹس ہیں قصور ان کا نہیں بینکوں کا ہے، ایک عجیب سا تاثر پیش کیا جارہا ہے لیکن ہم ڈرے نہیں، ہمیں انصاف کی امید ہے۔
ناصر شاہ کا کہنا تھا کہ حکومت کے پاس کرنے کو کچھ نہیں تو کہتے ہیں احتساب کریں گے، پیپلزپارٹی احتساب چاہتی ہے۔

بے نامی اکاونٹ کو نام جہانگیر ترین نے دیا: مرتضیٰ وہاب

علاوہ ازیں وزیراعلیٰ سندھ کے مشیر برائے اطلاعات مرتضیٰ وہاب نے کہا کہ سوئس اکاونٹس کے بارے میں پتا نہیں کب سے باتیں ہورہی ہیں، منی لانڈرنگ کے معاملے کی شفاف تحقیقات ہونی چاہیے، حکومت باتیں نہ کرے عملی طور پر کام کرے۔

انہوں نے کہاکہ ہر بےنامی اکاؤنٹ کو پی پی پی سے جوڑنا درست بات نہیں ہے، بے نامی اکاونٹ کو نام جہانگیر ترین نے دیا ہے لہذا خان صاحب اور اُن کے حواریوں سے بھی سوال ہونا چاہیے۔

Spread the love
  • 1
    Share

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں