آصف زرداری اور بلاول کے وکیل نیب کے سامنے پیش

آصف زرداری

اسلام آباد: محکہ جنگلات کی اراضی نجی کمپنی کو منتقل کرنے کے معاملے کی تحقیقات کے سلسلے میں آصف زرداری اور بلاول بھٹو زرداری کے وکلا نیب کی مشترکہ تحقیقاتی ٹیم کے سامنے پیش ہوئے۔

قومی احتساب بیورو (نیب) نے سابق صدر آصف زرداری اور ان کے صاحبزادے بلاول بھٹو زرداری کو 9 دسمبر کو نوٹس جاری کیا تھا جس میں انہیں محکمہ جنگلات کی اراضی نجی کمپنی کو منتقل کرنے کے معاملے کی تحقیقات کےلیے 13 دسمبر کو طلب کیا گیا۔

نیب کی جانب سے بلاول بھٹو اور آصف زرداری کو نجی کمپنی کے شیئر ہولڈر کی حیثیت میں طلب کیا گیا۔ نیب کے طلب کرنے پر آصف زرداری اور بلاول بھٹو زرداری کے وکلا نیب کے سامنے پیش ہوئے اور فاروق نائیک نے نیب ٹیم کو آصف زرداری اور بلاول کے نہ پیش ہونے کی وجوہات سے آگاہ کیا۔

ذرائع کے مطابق نیب ٹیم کی طرف سے فاروق ایچ نائیک کو تحریری سوالنامہ دیا گیا ہے جو آصف زرداری اور بلاول بھٹو زرداری کے لیے ہے۔

ذرائع کا کہنا ہےکہ نیب سی ڈی اے اور محکمہ ریو نیو کے افسران سے پہلے ہی پوچھ گچھ کرچکا ہے، نیب نے ایس ای سی پی سے پارک لین کمپنی کا ریکارڈ بھی حاصل کر رکھا ہے ۔

نیب میں پیشی کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے فاروق نائیک نے کہا کہ نیب کے جاری نوٹسز ہراسمنٹ اور سیاسی انتقام کے سوا کچھ نہیں، آصف زرداری اور بلاول کا کمپنی کے معاملات سے کوئی تعلق نہیں۔

انہوں نے کہا کہ تمام کاغذات دکھائے اور پوچھا یہ کیسے نیب کا کیس بنتا ہے؟ اس پر کوئی جواب نہیں ملا۔

(Visited 5 times, 1 visits today)
loading...

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں