35 نشستوں پر ضمنی انتخابات کیلئے پولنگ جاری

ضمنی انتخابات
loading...

اسلام آباد: قومی اور صوبائی اسمبلی کی 35 نشستوں پر ضمنی انتخابات کیلئے صبح 8 بجے پولنگ کا آغاز ہوچکا ہے۔

قومی اسمبلی کی 11 اور صوبائی اسمبلی کی 24 نشستوں پر ضمنی انتخابات کیلئے تمام تیاریاں مکمل کرلی گئیں۔تمام حلقوں کے پولنگ اسٹیشنوں پر بیلٹ پیپر، بیلٹ باکس سمیت دیگر سامان پاک فوج کی نگرانی میں پہنچادیا گیا۔ پولنگ عملہ بھی اپنے فرائض انجام دینے کے لیے پولنگ اسٹیشنوں پر پہنچ چکا ہے۔ پولنگ صبح 8 بجے سے شام 5 بجے تک جاری رہے گی۔

اسلام آباد کی نشست سمیت پنجاب میں قومی اسمبلی کی 9، سندھ اور خیبرپختونخوا میں قومی اسمبلی کے ایک ایک حلقہ پر پولنگ ہوگی۔پنجاب اسمبلی کی 11، سندھ اور بلوچستان کی دو دو جبکہ خیبرپختونخوا اسمبلی کے 9 حلقوں میں ضمنی انتخابات ہوں گے۔

مجموعی طور پر 35 حلقوں میں 92لاکھ 83 ہزار 74 ووٹرز اپنا حق رائے دہی استعمال کریں گے جن کیلئے 7 ہزار 489 پولنگ اسٹیشن بنائے گئے ہیں۔ ایک ہزار 727 پولنگ اسٹیشن کوحساس قرار دیا گیا ہے۔

پنجاب کے حلقہ پی پی 87 میانوالی اور پی پی 296 راجن پور پر امیدوار بلا مقابلہ کامیاب ہوگئے ہیں۔

فیصل آباد کے این اے 103 کے پولنگ اسٹیشن نمبر 282 میں پولنگ کا عمل شروع نہ ہوسکا جب کہ پی پی 103 پولنگ اسٹیشن نمبر 134 پر بھی پولنگ کے عمل میں تاخیر کا سامنا ہے۔

پریزائیڈنگ آفیسر کا کہنا ہے کہ پولنگ ایجنٹ نہ پہنچنے کے باعث پولنگ شروع نہیں ہوسکی ہے۔

پولنگ اسٹیشن جانے سے قبل ووٹرز ز اپنے ووٹ کی معلومات قومی شناختی کارڈ نمبر 8300 پر ایس ایم ایس کر کے حاصل کر سکتے ہیں۔

موبائل فون، کیمرہ اور تصویر کھینچنے والی ڈیوائس پولنگ اسٹیشن کے اندر لے جانے کی ممانعت ہے، ووٹرز اصل شناختی کارڈ ہمراہ نہ لائے تو ووٹ کاسٹ نہیں کر سکیں گے۔

زائد المیعاد اصل شناختی کارڈ پر بھی ووٹ ڈالا جا سکتا ہے ، میڈیا بھی صرف جن کے پاس اجازت نامہ ہیں وہ کیمرہ لے جا سکتے ہیں موبائل فون کی اجازت ہر گز نہیں ہوگی۔

ترجمان الیکشن کمیشن ندیم قاسم کے مطابق ضمنی انتخابات میں پہلی بار 7 ہزار 364 سمندر پار پاکستانی آئی ووٹنگ کے ذریعے حق رائے دہی استعمال کر سکیں گے۔

انہوں نے کہا کہ کیونکہ یہ پائلٹ پراجیکٹ ہے اس لیے اگر اس میں کوئی تکنیکی مسئلہ نہ آیا تو الیکشن کمیشن کی منظوری کے بعد بیرون ملک مقیم پاکستانیوں کے ووٹوں کو گنتی میں شامل کیا جا سکتا ہے ورنہ ان کو گنتی میں شامل نہیں کیا جائے گا۔

واضح رہے کہ قومی اور صوبائی اسمبلیوں کی مجموعی طور پر 35 نشستوں پر ضمنی انتخابات ہو رہے ہیں، جن میں قومی اسمبلی کے 11 اور صوبائی اسمبلیوں کے 24 حلقے شامل ہیں۔

قومی اسمبلی کے لیے اسلام آباد سے 1، پنجاب سے 8، سندھ سے 1 اور خیبر پختونخوا سے 1 نشست پر انتخاب ہوگا۔

اسی طرح صوبائی اسمبلیوں کے لیے پنجاب کے 11، سندھ کے 2، خیبر پختونخوا کے 9 اور بلوچستان کے 2 حلقوں میں بھی ضمنی الیکشن ہوگا۔

ضمنی انتخابات میں حصہ لینے کے لیے کُل 661 امیدواروں نے کاغذات نامزدگی جمع کروائے، جن میں 16 امیدواروں کے کاغذات مسترد ہوئے اور 645 کے منظور ہوئے جو انتخابات میں حصہ لے رہے ہیں۔

الیکشن کمیشن کا کہنا ہے کہ 35 حلقوں میں 92 لاکھ، 83 ہزار 74 ووٹرز حق رائے دہی استعمال کرسکیں گے جبکہ 51 ہزار 235 انتخابی عملہ خدمات سر انجام دے گا۔

Spread the love
  • 1
    Share

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں