تیونس ، ٹیکسوں کی وجہ سے بڑھتی مہنگائی کے خلاف پر تشدد مظاہرے۔

تیونس ،  بڑھتی ہوئی مہنگائی کے خلاف احتجاج  جاری ہیں،  مہنگائی حکومت کی طرف سے لاگو کیے گے ٹیکسز کی وجہ سے بڑھ رہی   ہے

تفصیلات  کے مطابق تیونس  میں  بڑھتی ہوئی مہنگائی کے خلاف احتجاج  جاری ہیں،  مہنگائی حکومت کی طرف سے لاگو کیے گے ٹیکسز کی وجہ سے بڑھ رہی   ہے تیونس میں مہنگائی کے خلاف ملک کے کئی شہروں میں احتجاجی مظاہرے جاری ہیں ، مظاہرے پر تشدد ہوتے  جارہے ہیں ۔  دوسری جانب پولیس اور قانون نافذ کرنے والے اداروں نے مظاہرین کو منتشر کرنے کے لیے ان کے خلاف طاقت کا استعمال کیا ۔

loading...

پولیس نے مظاھرین کو بھگانے کے لیے ان پر لاٹھی چارج اور آنسوگیس کی شیلنگ کی۔ غیر ملکی میڈیا  کے مطابق  یہ مظاہرے  گذشتہ سوموار کو پرتشدد مظاہرے شروع ہوئے۔ ان مظاہروں کے دوران توڑپھوڑ، لوٹ مار، جلاؤگھیراؤ اور دیگر پرتشدد حربے استعمال کیے گئے۔

یاد رہے  کہ تیونس کی حکومت نے رواں سال کے آغاز پر بعض نئے ٹیکس لاگو کیے تھے جن کیباعث غریب عوام کی مشکلات میں اضافہ ہوگیا تھا۔ اشیائے صرف کی قیمتوں میں اضافے اور معاشی نا ہمواری کے خلاف عوام سڑکوں پر نکل آئے۔گزشتہ روز دارالحکومت تیونسیہ میں شہریوں کی بڑی تعداد نے سڑکوں پر نکل کر احتجاج کیا۔ مظاہرین نے ٹائر جلا کر سڑکیں بند کردیں۔ مظاہرین کو منتشر کرنے کے لیے پولیس نے ان پر  آنسو  گیس  کی شیلنگ  کی۔

Spread the love

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں