عمران خان وزیراعظم بننے کیلئے سہارے ڈھونڈ رہے ہیں،مسلم لیگ (ن) کراچی ڈویژن

کراچی: پاکستان مسلم لیگ (ن) کراچی ڈویژن کے ایڈیشنل جنرل سیکرٹری سہیل ندیم ، جوائنٹ سیکرٹریزآزادقاد​ری،شبیراحمدخان،رمضان ملاح،خلیل بلوچ،خواجہ نیئراور میڈیا کوآرڈی نیٹرعبدالحمید بٹ نے کہا ہے کہ عمران خان وزیراعظم بننے کیلئے سہارے ڈھونڈ رہے ہیں۔ عوام اپنا حق رائے دہی کسی غیر ملک کے کہنے پر استعمال نہیں کرتے۔ آئندہ عام انتخابات میں عوامی ترقی کے مخالفین کا محاسبہ کریں گے۔ 2018ء کے الیکشن میں جھوٹ، منافقت اور الزام تراشی کی سیاست کا دھڑن تختہ ہوگا۔ تمام سیاسی اور جمہوری قوتوں کی متفقہ کاوشوں سے عام انتخابات 2018ء میں ہی ہوں گے،پاکستان میں سیاسی جمہوری استحکام آچکا ہے، پاکستان کی ترقی خوشحالی اور مضبوطی مسلم لیگ ن کی حکومت کی قابل فخر روایت ہے،تمام رکاوٹیں عبور کرکے پاکستان کو مستحکم اور عوام کو خوشحال بنائیں گے۔ ایسا سیاستدان ملک کی باگ ڈور کیا سنبھالے گا جو ہر وقت نشے میں رہتا ہو۔پیرکو جاری بیان میں مسلم لیگی رہنماؤں نے کہا کہ سی پیک منصوبہ سے لے کر لوڈ شیڈنگ کے خاتمے تک کیے گئے اقدامات کو عوام آئندہ انتخابات میں بھرپور پذیرائی بخشیں گے ۔مسلم لیگ(ن) کی قیادت کا جینا مرنا عوام کے ساتھ ہے،ہماری حقیقی عوامی خدمت کے ثبوت اور مخالفین کے جھوٹے دعوے عوام کے سامنے ہیں،مخالف سیاسی جماعت کے رہنما نے جھوٹ، منافقت اور الزام تراشی کی سیاست کو پروان چڑھایا، تبدیلی کے نعرے لگانے والوں نے بار بار موقف بدلنے کو تبدیلی سمجھ رکھا ہے، ہم نے عوامی خدمت میں نام کمایا ہے جبکہ بہتان خان نے جھوٹ، منافقت اور الزام ترشی میں نام بنایا ہے ۔انہوں نے کہاکہ عمران خان کو سہولتوں کی فراہمی کے منصوبوں کی مخالفت بہت مہنگی پڑے گی۔ پاکستان کے عوام نے سیسہ پلائی دیوار بن کر سازشوں کا مقابلہ کیا اورباطل کو شکست دی،عمران کے لیفٹ رائٹ موجودبینکوں کے نادھندہ اور چورہٹا دیئے جائیں یا وہ چھوڑ جائیں،تو ان کا مستقبل تاریک ہوجائے ۔ انہوں نے کہا کہ گزشتہ ساڑھے چار برس کے دوران حکومت نے ترقیاتی منصوبوں کا جال بچھا دیا ہے اور مکمل ہونے والے بڑے منصوبوں اور فلاحی پروگراموں سے عوام کی بڑی تعداد مستفید ہورہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ سی پیک 21 کروڑ پاکستانیوں کی خوشحالی کا عظیم الشان منصوبہ ہے اور چین کی اس تاریخی سرمایہ کاری کے ثمرات سامنے آنا شروع ہو چکے ہیں، سی پیک پاکستان کیلئے ایک گیم چینجر بن چکاہے اور اس منصوبے سے نہ صرف پاکستان بلکہ پورا خطہ مستفید ہو گا،مخالفین سن لیں کہ2018ء کے الیکشن کے بعد بھی انشاء اللہ ملک میں ن لیگ کی ہی حکومت قائم ہو گی،اپوزیشن کی سیاست مفروضوں پر مبنی ہے جس کا کوئی سیاسی مستقبل نہیں ہے۔

Spread the love

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں