ایس پی طاہر داوڑ کی میت پاکستانی حکام کے حوالے کر دی گئ

طاہر داوڑ
loading...

شہید ایس پی طاہر داوڑ کی میت طورخم بارڈر پر پاکستان کے حوالے کردی گئی، جس کے بعد جسد خاک پشاور کے لئے روانہ کردیا گیا۔

اس سے قبل ایس پی طاہرداوڑکی لاش کی حوالگی کے لیے افغان حکام اور پاکستانی وفد کے درمیان مذاکرات ہوئے ، پاکستانی وفد میں وزیرمملکت برائے داخلہ شہریارآفریدی، ایم این اے محسن داوڑ، صوبائی وزیراطلاعات شوکت یوسفزئی، ڈپٹی کمشنرخیبرمحمود اسلم اور پشاور پولیس کے سینئرآفیسر شامل تھے۔

واضح رہے کہ افغان حکام نے ایس پی رورل پشاور طاہر خان داوڑ کی میت طورخم بارڈر پر پاکستانی حکام کے حوالے کرنے سے انکار کردیا تھا، حکام کا کہنا تھا کہ میت صرف وزیرستان سے تعلق رکھنے والے ایم این اے محسن داوڑ کو دی جائے گی۔

ایس پی طاہر داوڑ کی میت کی حوالگی میں تاخیر پر پاکستان نے افغانستان سے احتجاج کرتے ہوئے افغان ناظم الامور کو دوبارہ دفتر خارجہ طلب کیا تھا۔

وزیرمملکت برائے داخلہ شہریار آفریدی اور وزیر اطلاعات خیبر پختونحوا شوکت یوسفزئی بھی میت وصول کرنے کے لیے طورخم گیٹ پر موجودتھے۔

ایس پی طاہر داوڑ کے بیٹے امجد کو طاہر داوڑ کا جسد خاکی وصول کرنے بیگیاڑی چیک پوسٹ سے طور خم بارڈر روانہ کردیا گیا اس سے قبل طاہر داوڑ کے اہل خانہ اور رشتے داروں کا قافلہ ضلع خیبر میں روک دیا گیا تھا۔

ایس پی طاہر داوڑ کا جسد خاکی افغان شہر جلال آباد سے طورخم بارڈر لایا گیا جہاں وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا محمود خان کی جانب سے تشکیل دی گئی دو رکنی ٹیم کو میت وصول کرنا تھی۔

Spread the love

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں