منگیتر کی موت کے باوجود دلہن بننے والی خاتون

loading...

ایک انڈونیشین خاتون جس کا منگیتر گزشتہ ماہ لائن ائیر کی پرواز کو پیش آنے والے حادثے میں ہلاک ہوگیا تھا، کو یہ سانحہ طے شدہ شادی کی تیاریاں تنہا کرنے سے روک نہیں سکا۔

اس جوڑے کی شادی 11 نومبر کو طے تھی مگر انتان سیاری نامی خاتون کے منگیتر 29 اکتوبر کو طیارے کے حادثے میں ہلاک ہوگئے۔

مگر خاتون کے منگیتر کی آخری خواش شادی تھی اور اس کی موت بھی انتان کو اسے پورا کرنے سے روک نہیں سکی۔

اس کاتون نے اپنے انسٹاگرام اکاﺅنٹ پر پوسٹ لکھتے ہوئے بتایا کہ اس کے منگیتر ڈاکٹر ریو نندا پراتما نے مذاق میں کہا تھا ‘ اگر میں 11 نومبر تک واپس نہیں آسکا تو اپنا عروسی لباس پہننا جو میں نے تمہارے لیے منتخب کیا، اچھا میک اپ کرنا اور سفید گلاب کے پھول ہاتھ میں پکڑ کر اچھی تصاویر لینا اور پھر وہ تصاویر مجھے بھیج دینا’۔

اور انتان نے بالکل ایسا ہی کیا۔

26 سالہ خاتون نے انسٹاگرام پر اپنی تصویر پوسٹ کی جس میں دیکھا جاسکتا ہے کہ انہوں نے شادی کے دن کیسے تیاری کی۔

انہوں نے سفید عروسی لباس، سفید حجاب، میک اپ ، سفید گلاب کے پھولوں کا گلدستہ پکڑ کر مسکراتے ہوئے تصاویر کھچوائیں۔

انہوں نے لکھا ‘ میرے اندر اتنی اداسی ہے کہ میں وضاحت نہیں کرسکتی، مگر میں تمہارے لیے مسکرا رہی ہوں، میں ماتم نہیں کروں گی، میں اسی طرح مضبوط رہوں گی جیسا تم مجھے کہتے تھے’۔

ایک اور تصویر میں وہ منگیتر کی بہن کے ساتھ ہیں اور اس کے کیپشن میں لکھا ‘ اگرچہ اب تم میرے ساتھ نہیں، تمہاری بہن میرے ساتھ ہے تاکہ تمہاری آخری خواہش پوری کی جاسکے، میں جانتی ہوں کہ اوپر تم بھی خوش ہوگے’۔

خیال رہے کہ گزشتہ ماہ کے آخر میں پیش آنے والے حادثے میں 189 افراد ہلاک ہوگئے تھے۔

Spread the love
  • 12
    Shares

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں