بجلی کی قیمتوں میں اضافہ ایک بار پھر مؤخر

گیس کی قیمتوں

وفاقی حکومت نے بجلی کی قیمتوں میں اضافہ ایک بار پھر مؤخر کردیا ہے۔

اسلام آباد میں وزیر خزانہ اسد عمر کی زیر سربراہی اقتصادی رابطہ کمیٹی کا اجلاس ہوا۔ کمیٹی نے دسمبر تا فروری زیرو ریٹڈ شعبوں کو سو فیصد آر ایل این جی فراہم کرنے کی منظوری دے دی۔ مارچ سے نومبر تک پانچ زیرو ریٹڈ شعبے پچاس فیصد آر ایل این جی اور پچاس فیصد سوئی گیس استعمال کریں گے۔

ای سی سی کے اجلاس میں صرف ایک ایجنڈا ہی زیر بحث آسکا اور بجلی کے نرخوں میں ردو بدل پر بات نہ ہوسکی۔ کمیٹی نے بجلی کی قیمت میں اضافے کا معاملہ ایک بار پھر مؤخر کردیا۔

نیپرا نے حکومت کو 3 روپے 82 پیسے فی یونٹ اضافہ کی سفارش کی ہے۔ بجلی کی قیمتوں میں اضافے کے نتیجے میں صارفین سے تقریباً 400 ارب روپے ماہانہ اضافی وصول کئے جائیں۔

واضح رہے کہ حکومت اس سے قبل گیس کی قیمتوں میں 10 سے لے کر 143  فیصد تک اضافہ کرچکی ہے جب کہ منی بجٹ کی صورت میں عوام پر مہنگائی کا بم بھی گرایا جاچکا ہے۔

Spread the love
  • 10
    Shares

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں