بھارت،سڑک اور آمدورفت کا نظام نہ ہونے کی وجہ نہ ہونے پر پیدل مریضہ تین دن بعد اسپتال پہنچ گئیں

loading...

بھارت میں سڑک اور آمدورفت کا نظام نہ ہونے کی وجہ نہ ہونے پر پیدل مریضہ تین دن بعد اسپتال پہنچ گئیں مریضہ کو گھر کے چھ افراد چارپائی پراسپتا ل کے لیے لیکر نکلے، 60 کلومیڑ کا سفر تین دن میں طے کیا، راستے میں تین جگہ قیام کیا بالا آخر ہسپتال پہنچ گئے
تفصیلات کے مطابق بھارتی ریاست چھتیس گڑھ کی رہنے والی خاتون مریض کو سڑک نہ ہونے پر چارپائی کے ذریعے 60کلو میٹر کا سفر 3دن میں طے کرکے ضلعی اسپتال پہنچادیاگیا۔بھارتی ٹی وی کے مطابق مطابق نرائن پور کے گرام گورکل گاؤں کی رہنے والی ماہاری کے گاؤں  سے نرائن پور 80کلومیٹر دور ہے جہاں آمدورفت کا کوئی انتظام نہیں ۔وہاں سے مریضہ کو اسپتال لے جانا محال تھا ۔گھروالوں نے مریضہ کو چارپائی پر گڈ چرولی ضلع کے بھامر گڑھ تحصیل کے لاہر ی صحت مرکز لانے کا فیصلہ کیاجس کے بعد ماہاری کو گھر کے چھ افراد لیکر اسپتال کیلئے نکلے، راستے میں تین جگہ قیام کیا۔ بالآخر تین دن مسلسل پیدل چل کر خاتون مریضہ کو لاہری اسپتال پہنچایا ۔ ابتدائی معائنے کے بعد اسے ایمبولینس کے ذریعے بھامر گڑھ منتقل کردیا گیا جہاں اس کا علاج جاری ہے۔ (ذرائع این این آئی)

Spread the love

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں