کراچی، مقتول انتظار کے ساتھ گاڑی میں موجود لڑکی بھی شامل تفشیش

فائرنگ کے بعد جب گاڑی رکی تو میں رکشہ لے کر چلی گئ، عینی شاہد لڑکی

کراچی: چند روز پہلے پولیس کے ہاتھوں قتل ہونے والے نوجوان انتظار کے ساتھ ایک لڑکی بھی موجود تھی۔ جو موقع سے فرار ہوگی تھی۔ تاہم اب پولیس نے اس لڑکی کو بھی تفشیش میں شامل کر لیا ہے۔ لڑکی نے اپنے بیان میں کہا کہ فائرنگ سے قبل ہم نے قریب سے ہی 2 برگر خریدے ۔جس کے بعد انتظار کا ایک دوست نظر آیا ۔جس سے انتظار نے ہاتھ ملایا۔اس کے کچھ ہی دیر بعد ایک گاڑی ہماری گاڑی کے آگے آئی، ہمیں روکا گیا ۔ انتظار سے پوچھا کیا ہورہا ہے،لیکن اس نے کوئی جواب نہیں دیا۔انتظار نے گاڑی کو آگے بڑھایا تو فائرنگ ہو گئی ، گاڑی رکی تو وہ اتری اور رکشہ لے کرچلی گئی۔واضح رہے کہ اس سے پہلے انتظار کے والد نے کار میں موجود لڑکی کو سامنے لانے کا مطالبہ کیا تھا جبکہ تفتیش پر عدم اعتماد کا اظہار بھی کیا تھا۔ (ذرائع این این آئی)

Spread the love

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں