منی لانڈنگ کیس، انور مجیداوران کے بیٹےعبدالغنی کا24 اگست تک جسمانی ریمانڈ منظور

انور مجید اور عبدالغنی مجید

کراچی: منی لانڈرنگ کیس میں بینکنگ کورٹ نے ملزمان انور مجید اور بیٹے عبدالغنی کا 24 اگست تک جسمانی ریمانڈ دے دیا۔

ایف آئی اے نے انور مجید اور عبدالغنی مجید کو بغیر ہتھکڑی ہی ریمانڈ کیلئے بینکنگ کورٹ پیش کیا، انور مجید نے عدالت میں میڈیا کی موجودگی پر اعتراض کیا اور ایف آئی اے افسران سے سوال کیا کہ آپ نے تو کہا تھا کہ میڈیا نہیں ہوگا، آپ لوگ میری ویڈیو نہ بنائیں، میڈیا کو یہاں سے ہٹائیں۔
یاد رہے ایف آئی اے ذرائع کے مطابق جعلی اکاؤنٹس کیس میں سابق صدر آصف علی زرداری کے دوست انور مجید کے اکاؤنٹس، 12 فیکٹریاں اور شوگر ملز سیل کی جا چکی ہیں۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ جعلی اکاؤنٹس میں پائی جانے والی رقم 44 ارب کے شواہد مل گئے ہیں جبکہ 100 ارب سے زائد کی ترسیل کے شواہد ملنے کا امکان ہے۔
جعلی اکاؤنٹس کے علاوہ اومنی گروپ کے خلاف بھی الگ سے تحقیقات ہونگی۔ جعلی اکاؤنٹس کے مقدمے میں ہی منی لانڈرنگ کی دفعہ عائد کی جائے گی۔

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں