چیئرمین پی سی بی نجم سیٹھی مستقبل میں سخت خدشات کی زد میں آگئے

چیئرمین پی سی بی نجم سیٹھی

لاہور:نجم سیٹھی کا بطور چیئرمین پی سی بی مستقبل سخت خدشات کی زد میں آگیا، وہ تقریب کے اختتام پر درجنوں کیمروں کے سامنے سوالوں کا جواب دینے سے گریز کرتے ہوئے گاڑی میں بیٹھ گئے۔

عام انتخابات میں پی ٹی آئی کو واضح برتری حاصل ہوتے ہی چیئرمین پی سی بی نجم سیٹھی کو تبدیل کیے جانیکی باتیں بھی ہونے لگی تھیں،وزرات عظمی کا حلف اٹھانیوالے عمران خان کو ابھی حکومت سازی اور وزارتوں سمیت کئی مشکل اور اہم فیصلے کرنا ہیں،پی سی بی کا معاملہ شاید فوری طور پر زیر بحث نہ آئے لیکن سپورٹس کے صحافیوں کی بڑی دلچسپی اس بات میں ہے کہ نجم سیٹھی کا کیا بنے گا۔

گزشتہ روز فضل محمود قومی کلب کرکٹ کی اختتامی تقریب میں شرکت کیلئے چیئرمین پی سی بی ایل سی سی اے گراؤنڈ لاہور آئے تو واپس جاتے وقت وہاں موجود میڈیا کے نمائندوں کا پہلا سوال یہی تھا کہ آپکا کیا مستقبل ہوگا؟۔ایک صحافی نے سوال کیا کہ عمران خان وزیر اعظم بن گئے ہیں انکے بارے میں کیا کہنا چاہیں گے،نجم سیٹھی گاڑی کی طرف چلتے گئے اور ساتھ ہی بار بار ’’اوہو ہو،اوہو ہو‘‘ کرتے رہے۔

دوسرا سوال ہوا کہ سنا ہے آپکی سیٹ کو خطرہ ہے، اگلا سوال ہوا کیا آپ عمران خان کو مبارکباد دینا چاہیں گے۔کوئی جواب نہ ملنے پر بھی صحافی باز نہ آئے،ایک نے کہہ دیا سر’’او ہوہو‘‘ تو بعد میں ہوگی ابھی کسی بات کا جواب تو دیدیں، جواب آیا ’’اوہوہو‘‘ اور ساتھ ہی انہوں نے ’’آہا ہا‘‘ بھی کردیا۔اس پر ایک اور سوال داغا گیا کہ کیا آپکی چڑیا باہر بھی نکلے گی یا گھونسلے میں ہی رہے گی، نجم سیٹھی نے ’’آہا ہا، آہاہا‘‘ کیا اور گاڑی کی سیٹ پر بیٹھ کر روانہ ہوگئے۔یاد رہے کہ نجم سیٹھی کی جگہ سابق آئی سی سی چیف احسان مانی کو چیئر مین پی سی بی بنائے جانے کی افواہیں گرم ہیں ۔

مزید پڑھیں۔  کشمیریوں کی خواہش ہے کہ پاکستان ترقی کرے ،راجہ فاروق حیدر

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں