کوئٹہ میں اناڑی ڈاکٹر نے لڑکی کا غلط آپریشن کر ڈالا

آپریشن

غفلت، لاپرواہی یا اناڑی پن ، کوئٹہ میں سرکاری اسپتال کے سرجن نے اپینڈکس کے آپریشن کے دوران پیشاب کی نالی کاٹ کر سترہ سالہ لڑکی کو عمر بھر کے لیے یورین بیگ کا محتاج بنا دیا ۔

لڑکی کا غریب والد مکان بیچ کر نجی اسپتالوں میں علاج کرانے پر مجبور ہے۔ اے ون سٹی کوئٹہ کی رہائشی سترہ سالہ یاسمین سلیمان جن کا جنوری دو ہزار سترہ کو بی ایم سی اسپتال کوئٹہ میں اپینڈیکس کا آپریشن ہوا تھا۔

مگر آپریشن کے تین روز بعد پتہ چلا کہ غافل  ڈاکٹروں نے نہ صرف سوئی جسم کے اندر چھوڑ دی بلکہ پیشاب کی نالی کو بھی نقصان پہنچایا۔

والد نے بچی کوکراچی منتقل کیا جہاں ان کا دوبارہ آپریشن کر کے یورین بیگ لگوا دیا جو اب عمر بھر یاسمین کے ساتھ رہے گا۔

مجبور والد نے بچی کی زندگی بچانے کے لیے اپنا مکان تک فروخت کرڈالا۔ یاسمین کا کہنا ہے کہ آپریشن کے بعد انہیں اپنا تعلیمی سلسلہ بھی مستقل طور ختم کرنا پڑا۔

Spread the love
  • 2
    Shares

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں