پاکستان نے امریکہ کے لیے کچھ نہیں کیا، امریکی صدر ٹرمپ کا الزام

امریکی صدر

واشنگٹن: امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے الزام عائد کیا ہے کہ پاکستان نے امریکہ کے لیے کچھ نہیں کیا ہے۔

امریکی ٹی وی چینل کو انٹرویو دیتے ہوئے امریکی صدر ٹرمپ نے کہا کہ ہم نے پاکستان کی امداد اس لیے بند کی کیونکہ پاکستان نے ہمارے لیے کچھ نہیں کیا، امریکا نے پاکستان کو سالانہ 1.3 بلین ڈالر کی امداد دی۔

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے کہا کہ اسامہ بن لادن پاکستان میں روپوش رہا، پاکستان کو افغانستان میں دہشت گردی روکنے کے لیے کہا گیا لیکن اس میں بھی کوئی پیش رفت نہ ہوسکی۔

ڈونلڈ ٹرمپ نے میڈیا، ہیلری کلنٹن اور سابق صدر بارک اوباما کو بھی تنقید کا نشانہ بنایا اور پھر پاکستان پر تنقید شروع کردی۔

سعودی صحافی جمال خاشقجی کے قتل کے حوالے سے ٹرمپ نے کہا کہ قتل سے متعلق رپورٹ ایک دو روز میں آجائے گی جس میں پتہ چل جائے گا یہ اقدام کس نے کیا۔

چین پر تجارتی پابندیوں کے حوالے سے امریکی صدر نے کہا کہ چین تجارت کے لیے امریکا کے ساتھ سمجھوتے کا خواہش مند ہے، چین سمجھوتے تک پہنچنا چاہتا ہے، اس نے ہمیں ان امور کی فہرست ارسال کی ہے جن پر وہ عمل کے لیے تیا رہے یہ ایک طویل فہرست ہے مگر ابھی تک ہمارے لیے قابل قبول نہیں ہے۔

یاد رہے کہ رواں سال کے شروع میں بھی امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے اپنے دھمکی آمیز ٹویٹ میں کہا تھا کہ پاکستان امریکہ کو ہمیشہ دھوکا دیتا آیا ہے، پاکستان نے امداد کے بدلے امریکا کو بے وقوف بنانے کے سوا کچھ نہیں کیا، مگر اب ایسا نہیں چلے گا۔

Spread the love
  • 1
    Share

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں