پی ٹی آئی ،ن لیگ کا منشور سیاست کو بدنام کرنا : خورشید شاہ

قائد حزب اختلاف خورشید شاہ
loading...

سکھر: اپوزیشن لیڈرخورشید شاہ نے کہا ہے کہ شہبازشریف کا تینوں بڑوں کے مل بیٹھنے کا بیان آئی واش ہے جبکہ پی ٹی آئی اور (ن) لیگ دونوں کا منشورسیاست کو بدنام کرنا ہے۔سکھر میں میڈیا سے بات کرتے ہوئے خورشید شاہ نے کہا کہ شہبازشریف کا تینوں بڑوں کے مل بیٹھنے کا بیان آنکھوں میں دھول جھونکنے کے مترداف ہے، شہبازشریف پہلے اپنی پارٹی میں تو اداروں سے ٹکراؤ ختم کرائیں، (ن) لیگ گالی گلوچ اور بد زبانی پر اتر آئی ہے جب کہ پی ٹی آئی اور (ن) لیگ دونوں کا منشور سیاست کو بدنام کرنا ہے، عمران خان کا منشور ہے کہ صرف عزت اچھالو اور بے عزت کرو۔خورشید شاہ نے بلین ٹری دعوؤں کو جعلسازی قرار دیتے ہوئے کہا کہ ہم نے سندھ میں ایک دن کی شجرکاری کا ورلڈ ریکارڈ بنایا، گینز بک کی ٹیم آئی اور اس نے ورلڈ ریکارڈ مانا، لگتا ہے عمران نے ایک ارب درخت زمین پر نہیں ہوا میں لگائے، ایک ارب درخت گینز بک والوں کو کیوں نظر نہیں آئے۔چوہدری نثار کی جانب سے نواز شریف پر تنقید سے متعلق سوال کے جواب میں خورشید شاہ نے کہا کہ کسی لیڈر کے ساتھ ایک دن بھی گزار لیا جائے تو اسے ایسے نہیں کہنا چاہیے، سب سے بددیانت آدمی تو وہ ہے جس نے خود فرعون کے ساتھ وقت گزارا، چوہدری نثار تو نواز شریف کی وزارت کا حصہ بھی رہے، 2014 میں میرا جمہوریت بچانے میں کردار بھی چوہدری نثارکو برا لگا، کچھ لفظوں کی تمیز ہوتی ہے، دیکھنا ہے (ن) لیگ کیا ایکشن لیتی ہے جب کہ چوہدری نثار چاہتے ہیں کہ نوازشریف اسے خود نکال دیں۔ میں ہمیشہ کہتا تھا میاں صاحب سنبھل جاؤ، اب نواز شریف کو سمجھ آگئی ہو گی کہ اپوزیشن لیڈرکیوں یہ کہتا تھا۔خورشید شاہ کا مزید کہنا تھا کہ سینیٹ میں پی ٹی آئی کا اپوزیشن لیڈر کا دعویٰ کرنا ہی غیر جمہوری ہے، پوری کوشش ہے نگران وزیراعظم کا مسئلہ پارلیمنٹ میں طے ہو جائے، نگران وزیراعظم کیلئے وزیراعظم نے نام دیئے نہ میں نے دیئے، اپوزیشن کے سیاستدان جلسوں کی بجائے براہ راست مجھے نام دیں، جلسوں میں نام دینے سے شخصیت متنازعہ ہو کرپیچھے ہٹ جاتی ہے اور30 مئی سے پہلے نگران وزیراعظم کا نام فائنل کرنا ہے۔

Spread the love

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں