تھر میں غذائی قلت سے ایک اور بچی جاں بحق

تھر

تھر پارکر: صوبہ سندھ کے صحرائی علاقے تھر میں غذائی قلت اور وبائی امراض کے باعث بچوں کی اموات جاری ہیں۔ غذائی قلت کے سبب سول اسپتال مٹھی میں ایک اور بچی انتقال کرگئی۔

تفصیلات کے مطابق تھر میں غذائی قلت اور وبائی امراض کے سبب سول اسپتال مٹھی میں ایک اور بچی انتقال کرگئی۔

اسپتال ذرائع کے مطابق صرف سول اسپتال مٹھی میں رواں ماہ انتقال کر جانے والے بچوں کی تعداد 25 ہوگئی ہے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ مٹھی اسپتال میں رواں سال 530 بچے انتقال کر چکے ہیں۔

دوسری جانب بچوں کی اموات سے متعلق مٹھی میں اجلاس جاری ہے جس میں شرکت کے لیے وزیر صحت سندھ بھی پہنچ گئیں۔ مٹھی کے ڈپٹی کمشنر آفس میں ہونے والے اجلاس میں ضلع بھر کے ڈاکٹرز شریک ہیں۔

خیال رہے کہ چند روز قبل وفاقی وزیر صحت عامر محمود کیانی نے کہا تھا کہ حکومت جلد تھر کے لیے خصوصی پیکج کا اعلان کرے گی۔

اس سے قبل چیف جسٹس آف پاکستان نے بھی تھر کی صورت حال پر نوٹس لیتے ہوئے کہا تھا کہ اب ایک بھی بچہ غذائی قلت سے نہیں مرنا چاہیئے۔

سندھ حکومت کا کہنا ہے کہ تھر کے مسئلے کے حل کے لیے جلد ہی پیکج کا اعلان کریں گے، چیف جسٹس نے جب پیکج کی تاریخ کے بارے استفار کیا تھا تو اے جی سندھ نے کہا تھا کہ آئندہ 15 روز میں تھر میں امدادی کارروائیاں شروع ہوجائیں گی۔

Spread the love
  • 2
    Shares

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں