کشمیر: بھارتی فورسز کی اندھا دھند فائرنگ سے حاملہ خاتون شہید

کشمیر
loading...

سری نگر: بھارتی فورسز نے ریاستی دہشت گردی کا مظاہرہ کرتے ہوئے کشمیر کے ضلع پلوامہ میں حاملہ خاتون کو شہید کردیا، تین روز میں بھارتی فورسز 9 کشمیریوں کو شہید کرچکی ہے۔

تفصیلات کے مطابق مقبوضہ کشمیر میں بھارت کی درندہ صفت فوج نے انسانیت کی تذلیل کی انتہا کردی، کشمیری خاتون سے بھارتی فورسز کے بہیمانہ سلوک نے بھارت کا گھناؤنا چہرہ ایک بار پھر دنیا کے سامنے عیاں کردیا۔

کشمیری خبر رساں ادارے کا کہنا تھا کہ بھارتی فورسز کے ظلم و بربریت کے نتیجے میں وادی کشمیر میں تین روز دوران 9 کشمیری شہید چکے ہیں جن میں 5 ماہ کی حاملہ خاتون بھی شامل ہے۔

کشمیر میڈیا کا کہنا ہے کہ مقبوضہ کشمیر ضلع پلوامہ میں کچھ نامعلوم افراد نے بھارتی فورسز کے کیمپ پر دستی بم پھینکا تھا جس پر رد عمل دیتے ہوئے بھارت کے دہشت فورسز نے نہتے کشمیروں پر بے دریغ گولیاں برسادیں جس کی زد میں آکر فرودسہ اختر نامی خٓتون زخمی ہوئی تھیں۔

کشمیری میڈیا کہنا ہے کہ بھارتی فورسز کی فائرنگ سے زخمی ہونے والی خاتون کو فوری طور پر اسپتال منتقل کیا گیا تھا تاہم وہ زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے راستے میں دم توڑ گئی تھیں۔

مقامی خبر رساں اداروں کا کہنا تھا کہ بھارت کی ریاستی دہشت گردی کا نشانہ بننے والی کشمیری خاتون حاملہ تھیں۔

مقبوضہ کشمیر کے علاقے بارہ مولا میں بھارتی فورسز نے سرچ آپریشن کے دوران 4 کشمیری نوجوانوں کو شہید کردیا تھی۔

کشمیری میڈیا کا کہنا ہے کہ ظالم بھارتی فوج کی جانب سے کشمیری نوجوانوں کی شہادت کے بعد علاقے میں غیراعلانیہ کرفیو نافذ کردیا گیا ہے، جبکہ انٹرنیٹ اور موبائل فون سروس بھی بند کردی گئی تھی۔

Spread the love
  • 1
    Share

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں