پاک و چین/کراچی سے پشاور کے درمیان ٹریک کی اپ گریڈیشن کا معاہدہ طے

اکستان اور چین کےدرمیان کراچی سے پشاور کے درمیان ریلوے ٹریک کی اپ گریڈیشن کا معاہدہ طے پاگیا۔

لاہور میں پاکستان ریلوے کے ہیڈ کوارٹر میں پاکستان اور چین کے درمیان معاہدے پر دستخط ہوئے۔

اس موقع پر پریس کانفرنس کرتے ہوئے شیخ رشید نے کہا کہ پاکستان اور چین ایک دوسرے کی دوستی پر بھروسہ کرتے ہیں، پاکستان اور چین کے درمیان ریلوے کے شعبے میں تعاون خوش آئند ہے، پاکستان میں ریل سروس بہت پیچھے رہ گئی ہے، ہم اسے آگے لے جانا چاہتے ہیں۔

انہوں نے بتایا کہ 23 نومبر کو وزیراعظم چار ٹرینوں کا افتتاح کریں گے اور وزیراعظم نے لاہور ہیڈ کوارٹرز کے دورے کی دعوت قبول کی ہے۔

شیخ رشید نے مزید کہا کہ میرا خواب پورا ہو رہا ہے ، 14 سال پہلے اس منصوبے کا سوچا تھا، ہمارے 1700 کلومیٹر ٹریک کی پٹڑی آج بھی ویران پڑی ہے۔

loading...

ان کا کہنا تھا کہ آئی ایم ایف وقت کی ضرورت ہے، اپنی ضرورت کے مطابق آئی ایم ایف کی ضرورت ہے، آئی ایم ایف کے پاس جانے کی کڑوی گولی کھانی پڑجاتی ہے۔

شیخ رشید نے اعلان کیا کہ 11 دسمبر کو ریلوے میں 10 ہزار ملازمتوں کا اشتہار دیا جارہاہے، زندہ رہا تو ایک لاکھ ملازمتیں دے کر جاؤں گا۔

وزیر ریلوے نے سابق صدر کو ہدفِ تنقید بناتے ہوئے کہا کہ زرداری نےکمیشنیں نہ کھائی ہوتیں تو آج ریلوے کا محکمہ کہاں سے کہاں پہنچ چکا ہوتا، مجھےخطرہ ہے زرداری کہیں بلاول کی سیاست بھی نہ لے ڈوبیں، آنے والے وقت میں زرداری اور بلاول کی سیاسی راہیں جدا نظر آتی ہیں۔

ان کا کہنا تھاکہ نوازشریف کی پوری کوشش ہے ان کی سیاست چاہےختم ہو، مریم کی سیاست بچ جائے، چیئرمین سینیٹ بہت اچھے آدمی ہیں، ہم سیاستدان لوگوں سے غلط بیانی کرتے رہتے ہیں۔

ایک سوال کے جواب میں شیخ رشید نے کہا کہ عمران خان نے بہت محنت کی ہے، حکمت عملی کی تبدیلی یوٹرن نہیں۔

Spread the love
  • 16
    Shares

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں