طالبان جنگ سے تھک چکےہیں اب انہیں مذاکرات کیلئے تیار ہوجانا چاہیے،جنرل نکلسن

جنرل نکلسن
loading...

طالبان کے ساتھ امن مذاکرات کے ثمرات ظاہر ہونے میں کئی برس لگ سکتے ہیں، امریکی کمانڈر جنرل نکلسن

واشنگٹن: افغانستان میں اعلیٰ ترین امریکی کمانڈر جنرل نکلسن نے کہا ہے کہ افغانستان میں 16 برس سے جاری لڑائی سے عسکریت پسند اب تھک چکے ہیں اور وقت آ گیا ہے کہ طالبان امن مذاکرات کیلئے رضامند ہو جائیں۔

غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق ایک انٹرویومیں افغانستان میں اعلیٰ ترین امریکی کمانڈر جنرل نکلسن نے کہا کہ افغانستان میں 16 برس سے جاری لڑائی سے عسکریت پسند اب تھک چکے ہیں اور وقت آ گیا ہے کہ طالبان امن مذاکرات کیلئے رضامند ہو جائیں۔

جنرل نکلسن نے خبردار کیا کہ طالبان کے ساتھ امن مزاکرات کے ثمرات ظاہر ہونے میں کئی برس لگ سکتے ہیں۔بعض ماہرین اس خدشے کا اظہار کر رہے ہیں کہ موسم بہار کے شروع ہونے کے ساتھ عسکریت پسندوں کی کارروائیاں ایک بار پھر زور پکڑ سکتی ہیں۔

 تاہم جنرل نکلسن کا کہنا تھا کہ ٹرمپ انتظامیہ نے اس کی پیش بندی کرتے ہوئے افغانستان میں موجود امریکی افواج کیلئے دستیاب فوجی وسائل میں اضافہ کر دیا ہے۔

 لیکن بعض ماہرین کا کہنا تھا کہ اس حکمت عملی سے امریکی محکمہ خارجہ کی طرف سے سفارتی کوششوں کو دھچکہ لگے

Spread the love

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں