صدر مملکت اور وزیراعظم کی عید میلادالنبیﷺ کے موقع پر اہل وطن کو مبارکباد

عید میلادالنبی
loading...

اسلام آباد: جشن ولادت نبی صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم ملک بھر میں شایان شان طریقے سے منایا جا رہا ہے اور ہر طرف مرحبا یا رسول اللہ ﷺ کی گونج ہے۔

اس دن کے موقع پر صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی اور وزیراعظم عمران خان سمیت دیگر سیاسی شخصیات کی جانب سے بھی جشن ولادت رسول صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کے موقع پر قوم کو مبارکباد دی گئی ہے۔

صدر عارف علوی

صدر عارف علوی نے جشن ولادت رسول ﷺ کے موقع پر اپنے پیغام میں کہا کہ انسانیت کی فلاح کا دارومدار حضور صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کے اسوہ حسنہ پر عمل پیرا ہونے میں ہے اور ریاست مدینہ کے پیش نظر ہمیں دینی، قومی اور اجتماعی مفادات کو ترجیح دینی ہوگی۔

انہوں نے کہا کہ آپ صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کی زندگی سادگی، انصاف، رحمت، سخاوت اور تواضع کا درس اور ہمارے لیے کھلی کتاب کی صورت ہے۔

صدر مملکت نے اپنے پیغام میں کہا کہ اللہ تعالیٰ نے نبی صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کو پوری انسانیت کے لیے کامل رہنما اور معلم بناکر بھیجا اور سرکار دوعالم کی تعلیمات سے زندگی کے ہر گوشے میں انقلاب برپا ہوگیا۔

انہوں نے دعا کی ماہ مبارک ہمارے لیے خیر و برکت کا باعث ہو۔

وزیراعظم عمران خان

وزیراعظم عمران خان نے اپنے پیغام میں کہا کہ قوم کو آج پختہ عہد کرنا چاہیے کہ وہ اپنے ذاتی مفادات کو بالائے طاق رکھتے ہوئے صحیح معنوں میں سیرت طیبہ ﷺ کی پیروی کرے گی۔

ریڈیو پاکستان کی ایک رپورٹ کے مطابق وزیراعظم نے کہا کہ ہمیں ایسے اقدامات سے گریز کرنا چاہیے، جس سے دنیا میں اسلام کے تشخص کونقصان پہنچے۔

وزیراعظم عمران خان نے لوگوں پر زور دیا کہ وہ حضرت محمد ﷺ کی تعلیمات کے مطابق اپنی صفوں میں اتحاد، رواداری، بھائی چارہ اور ہم آہنگی برقرار رکھیں۔

وزیر اطلاعات فواد چودہدری

وفاقی وزیر اطلاعات فواد چوہدری نے حضرت محمد مصطفیٰ ﷺ کے یوم ولادت پر تمام مسلمانوں کو دلی مبارکباد دیتے ہوئے کہا کہ یہ دن ہمیں اسلام کے سنہری اصولوں کی یاد دلاتا ہے۔

وزیراطلاعات نے کہا کہ اس دن کا تقاضا ہے کہ مسلمانوں کے درمیان قربانی، رواداری، بھائی چارے اوراتحاد جیسی عظیم اقدار کو فروغ دیاجائے۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ انفرادی اور اجتماعی سطح پر نبی پاک ﷺ کی تعلیمات اور اسلام کے احکامات کی پیروی میں ہی ہماری نجات اور ملک کی امن وترقی مضمر ہے۔

Spread the love

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں